نامور عالم دین اُستاذالحدیث مولانا وکیل احمد شیروانی انتقال کر گئے

نامور عالم دین اُستاذالحدیث مولانا وکیل احمد شیروانی انتقال کر گئے

  

لاہور (نمائندہ خصوصی)ملک کے نامور عالم دین اور جامعہ اشرفیہ لاہور کے استاذ الحدیث مولانا وکیل احمد شیروانی مختصرعلالت کے بعد لاہور میں 82 سال کی عمر میں انتقال کر گئے،وہ برصغیر پاک و ہند کے معروف عالم دین مولانا جلیل احمد شیروانی (خلیفہ مجاز حضرت مولانا اشرف علی تھانوی رحمہ اللہ )کے بیٹے تھے۔ مرحوم نے پسماندگان میں 4 بیٹے ایک بیٹی اور بیوہ کے علاوہ ہزاروں طلباء اور عقیدت مندسوگوارچھوڑے۔ مرحوم کی نماز جنازہ جامعہ اشرفیہ میں شیخ الحدیث مولانا صوفی محمد سرور نے پڑھائی جس میں مفتی عبدالشکور ترمذی،مولانا پیر سیف اللہ خالد ، مولانا عبدالغفور سروہی،مولانا محب النبی، مولانا خلیل الرحمن حقانی، مولانا ڈاکٹر سعد صدیقی، مفتی انیس احمد مظاہری،مفتی غلام مصطفی، مولانا مشرف علی تھانوی، مفتی محمد عبداللہ (جامعہ خیر المدارس ملتان)مولانا عبدالرب امجد، پیر رضوان نفیس،مفتی ابوبکر علوی،مولانا محمد الیاس (سرگودھا)مولانا عبدالنعیم،خواجہ اعجاز احمد سکا،ڈاکٹر محمد نعیم اللہ،احسان اللہ تبسم، حافظ عبدالرؤف اور جامعہ اشرفیہ کے اساتذہ و طلباء سمیت مختلف شعبہ ہائے زندگی سے وابستہ ہزاروں افراد نے شرکت کی۔ مرحوم کو مقامی قبرستان اچھرہ لاہور میں سپردخاک کر دیا گیا۔دریں اثناء مولانا وکیل احمد شیروانی کی وفات پر جامعہ اشرفیہ لاہور کے مہتمم مولانا محمد عبیداللہ ، نائب مہتمم مولاناحافظ فضل الرحیم ، حافظ اسعدعبید، مولاناحافظ اجود عبید،مولانا محمد اکرم کاشمیری،پروفیسر مولانا محمد یوسف خان ،حافظ خالد حسن،مولانا زبیر حسن، مولانا فہیم الحسن تھانوی اور مولانا مجیب الرحمن انقلابی نے اظہارتعزیت کرتے کہا کہ مرحوم کی تمام زندگی درس و تدریس، اشاعت دین میں گذری، انہوں نے کہاکہ مرحوم انتہائی متقی پرہیز گار، درویش صفت، نیک سیرت خدا ترس انسان تھے، انہوں نے مرحوم کیلئے جنت الفردوس میں اعلیٰ مقام اور لواحقین کیلئے صبر جمیل کی دعا کی۔

وکیل احمد شیروانی

مزید :

صفحہ آخر -