شیخوپورہ:محکمہ صحت کی ٹیم کی مبینہ غفلت ،نومولود بثہ جاں بحق اہل علاقہ سراپا احتجاج

شیخوپورہ:محکمہ صحت کی ٹیم کی مبینہ غفلت ،نومولود بثہ جاں بحق اہل علاقہ سراپا ...
 شیخوپورہ:محکمہ صحت کی ٹیم کی مبینہ غفلت ،نومولود بثہ جاں بحق اہل علاقہ سراپا احتجاج

  

شیخوپورہ(بیورورپورٹ )حفاظتی ٹیکے لگانے والی ٹیم کی مبینہ غفلت ولاپرواہی سے 2ماہ کانومولودبچہ جاں بحق ہوگیا،بچے کی ہلاکت کے بعد ماں پر غشی کے دورؤں نے علاقہ مکینوں کو احتجاجی مظاہرہ کرنے پر مجبو کردیا،بتایا گیا ہے کہ مریدکے کی نواحی بستی فیصل کالونی میں محکمہ صحت ضلع شیخوپورہ کی طرف سے بچوں کو حفاظتی ٹیکے لگائے جارہے تھے کہ اسی دوران مذکورہ محکمہ کی ٹیم نے محنت کش طاہرملک کے2ماہ کے نومولودبچے زین کو ایک ہی وقت میں3 انجکشن لگادیئے جس سے مذکورہ بچے کی حالت غیر ہوگئی جسکو فوری طور پر تحصیل ہیڈ کوارٹر مریدکے منتقل کیا گیا لیکن نومولود بچہ زندگی کی بازی ہار گیا، بچے کی ہلاکت کی اطلاع ملتے ہی والدین پر غشی کے دورے پڑنے شروع ہوگئے نومولود بچے کی ہلاکت اور والدین کے غشی کے دورے شروع ہو گئے۔

دیکھ کرعلاقہ مکین سراپا احتجاج بن گئے مظاہرین نے محکمہ کے عملہ کی جانب سے غفلت ولاپرواہی سے نومولود بچے کی ہلاکت کا نوٹس لینے کے لیے وزیراعلیٰ پنجاب اور ڈی سی او شیخوپورہ میڈم کرن خورشید سے مطالبہ کیا ہے جبکہ دوسری جانب ڈپٹی ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسرتحصیل مریدکے کے ترجمان محمدجاویدنے اپنے موقف میں کہاہے کہ بچے کی ہلاکت ٹیکہ لگانے کی وجہ سے نہیں بلکہ نمونیابخارہونیکی وجہ سے ہوئی ہے اس میں حفاظتی ٹیکے لگانے والی ٹیم کاکوئی قصورنہیں۔

مزید :

صفحہ آخر -