قانون تحفظ ناموس رسالت ؐ کے خلاف سازش ناقابل برداشت ہے، صاحبزادہ زبیر

قانون تحفظ ناموس رسالت ؐ کے خلاف سازش ناقابل برداشت ہے، صاحبزادہ زبیر

  

کراچی (سٹاف رپورٹر) قائدجمعیت علماء پاکستان ڈاکٹرصاحبزادہ ابوالخیرمحمدزبیرنے کہاہے کہ پاکستان کے غیورغلامان مصطفی قانون تحفظ ناموس رسالت یعنی 295-C کو ختم کرنے یا اسے غیر مؤثر کرنے کو ہر گز برداشت نہیں کریں گے ، یورپی یونین کو کوئی حق نہیں پہنچتا کہ وہ ہمارے ملکی قوانین میں ترمیم یا اسے ختم کرنے کا مطالبہ کرے۔مقدمات سے نہیں گھبراتے شریعت کے خلاف کوئی بھی فیصلہ تسلیم نہیں کریں گے،حکومت ایسا کوئی قدم نہ اٹھا ئے جس سے ملک میں انارکی پھیلے اور ملک عدم استحکام کا شکار ہو ۔ توہین رسالت کے مجرموں کو سزا دینے کیلئے اگر قانونی راستہ بند کیا گیا اور عدالتوں کے راستے بند کیئے گئے تو پھر کوئی بھی غیرت مند مسلمان توہین کرنے والے کو اس کے انجام تک پہنچا دے گا اور اس کو روکنا بہت مشکل ہو گا اور اس کی تمام تر ذمہ داری حکومت وقت پر ہو گی۔یہ باتیں انہوں نے اورنگی ٹاؤن میں جمعیت علماء پاکستان کے زیراہتمام منعقدہ لبیک یارسول اللہ ﷺ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہیں، کانفرنس سے جے یوپی کے مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل شبیر ابوطالب، کراچی ڈویژن کے صدر علامہ قاضی احمدنورانی، جنرل سیکریٹری مفتی محمدبشیرالقادری،سینئر نائب صدر مفتی محمدرفیع الرحمان نورانی، علامہ عبدالغفاراویسی نورانی،علامہ عبدالقدیر عطاری،مفتی محمدرمضان ودیگر نے بھی خطاب کیا۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -