عراق میں تین امریکی مترجم سمیت اغواء، امریکی وزیر خارجہ نے اغواءکی تصدیق کر دی

عراق میں تین امریکی مترجم سمیت اغواء، امریکی وزیر خارجہ نے اغواءکی تصدیق کر ...
عراق میں تین امریکی مترجم سمیت اغواء، امریکی وزیر خارجہ نے اغواءکی تصدیق کر دی

  

بغداد (آن لائن)عراق کے دارالحکومت بغداد کے جنوبی علاقے الدورہ میں نامعلوم مسلح افراد نے تین امریکی شہریوں اور ان کے ایک مقامی مترجم کو یرغمال بنا لیا ہے۔العربیہکے مطابق تا حال یہ معلوم نہیں ہو سکا کہ آیا یرغمال بنائے گئے امریکی فوجی ہیں یا عام شہری ہیں۔امریکی وزیر خارجہ نے بغداد میں اپنے تین شہریوں کے اغواءکی تصدیق کی ہے اور بتایا کہ وہ اس سلسلے میں بغداد حکومت کے ساتھ رابطے میں ہے۔

امریکی حکومت کی جانب جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ یرغمالیوں کی بہ حفاظت واپسی کے لیے کوششیں تیز کر دی گئی ہیں۔ ابھی تک کسی گروپ نے اس کی ذمہ داری قبول نہیں کی۔’الحدث‘ ٹیلی ویژن کی رپورٹ کے مطابق تین امریکیوں کو دو روز قبل بغداد میں یرغمال بنایا گیا تھا۔امریکی وزارت خارجہ کے ایک اہلکار نے کہا ہے کہ ہم لوگ عراقی حکام کے مکمل تعاون کے ساتھ ان لوگوں کی نشاندہی اور بازیابی کے لیے کام کر رہے ہیں۔‘عراق میں سکیورٹی حلقوں سے ملنے والی غیر مصدقہ اطلاعات میں بتایا گیا ہے کہ تین امریکی باشندوں اور ان کے ایک ترجمان کو بغداد کے جنوبی علاقے سے اغوا کیا گیا۔‘امریکی وزارت خارجہ کے ترجمان جان کربی نے کہا ہے کہ ’بیرون ملک امریکی شہریوں کی حفاظت اور سکیورٹی ہماری اولین ترجیح ہے۔ادھربی بی سی کا کہنا ہے کہ اگر یہ معاملہ سنگین صورت اختیار کرتا ہے تو یہ عراق میں استحکام اور ترقی کی کوششوں کے لیے بڑا دھچکا ثابت ہو سکتا ہے۔

خیال ر ہے کہ گذشتہ ماہ قطر کے شکاریوں کے ایک گروپ کو بھی، جس میں شاہی خاندان کے افراد بھی شامل تھے، عراق کے ریگستان سے اغوا کر لیا گیا تھا۔سنہ 2011 میں عراق سے امریکی فوج کی واپسی سے قبل وہاں مغربی ممالک کے کئی شہریوں کے شیعہ اور سنی جنگجو گروہوں کے ہاتھوں اغوا کے واقعات پیش آتے رہے تھے لیکن فوج کی واپسی کے بعد اس طرح کے واقعات رونما نہیں ہو رہے تھے۔

مزید :

بین الاقوامی -