خطے میں عدم استحکام امریکی پالیسیوں کا نتیجہ ہے :سرتاج عزیز

خطے میں عدم استحکام امریکی پالیسیوں کا نتیجہ ہے :سرتاج عزیز
خطے میں عدم استحکام امریکی پالیسیوں کا نتیجہ ہے :سرتاج عزیز

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک )مشیر خارجہ سرتاج عزیزنے کہاہے کہ امریکی صدر کا پاکستان سے متعلق بیان حقائق کے برعکس ہے ،آپریشن ضرب عضب سے دہشت گردی میں 90فیصد کمی آئی ہے ۔ان کا کہنا ہے کہ خطے میںعدم استحکام امریکی پالیسیوں کی وجہ سے ہے ،امریکہ اور پاکستان نے مل کر روس کے خلاف افغان جہادیوں کی تربیت اور فنڈنگ کی ۔

سینیٹ میں امریکی صدر کے پالیسی بیان پر گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس خطے سمیت پوری دنیا میں دہشت گردی بڑھتی جارہی ہے ،پاکستان نے فیصلہ کیا ہے کہ کسی سے جنگ نہیں کریں گے ۔انہوں نے کہا کہ امریکی صدر کے خدشات کی دیگر وجوہات بھی ہو سکتی ہیں ،بارک اوباما نے پاکستان سے متعلق جن نکات کا ذکر کیا انہیں چیلنج کے طور پر لے کر نمٹنا ہو گا۔

ان کا کہنا تھا کہ جمہوری نظام مضبوط ہو گا تو سیاسی استحکام آئے گا ،2014کے مقابلے میں2015میں دہشت گردی کے واقعات میں کمی آئی ۔ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں قومی عزم مضبوط ہے ۔واضح رہے کہ امریکی صدر نے کچھ روز قبل پالیسی بیان دیتے ہوئے کہا تھا کہ پاکستان ،افغانستان اورمشرق وسطیٰ میں اگلے دس سال تک دہشت گردی اور عدم استحکام کی فضاءرہے گی۔

مزید :

قومی -