’جس دن ایران سے تعلقات ختم کئے اسی دن سعودی عرب نے کروڑوں ڈالر دینے کا اعلان کردیا‘ نیا تنازعہ

’جس دن ایران سے تعلقات ختم کئے اسی دن سعودی عرب نے کروڑوں ڈالر دینے کا اعلان ...
’جس دن ایران سے تعلقات ختم کئے اسی دن سعودی عرب نے کروڑوں ڈالر دینے کا اعلان کردیا‘ نیا تنازعہ

  

موگادیشو (مانیٹرنگ ڈیسک) افریقی ملک صومالیہ کو ایران سے تعلقات منقطع کرنے پر سعودی عرب کی طرف سے بھاری انعام ملنے کی خبروں نے سعودی ایران کشیدگی کے حساس معاملے میں ایک نئے تنازعے کا اضافہ کر دیا ہے۔

نیوز ایجنسی روئٹرز کے مطابق رواں ماہ جس دن صومالیہ نے ایران کے ساتھ تعلقات منقطع کرنے کا اعلان کیا اسی دن سعودی عرب کی طرف سے اسے پانچ کروڑ ڈالر (تقریباً پانچ ارب پاکستانی روپے) امداد کی یقین دہانی کروا دی گئی۔ صومالیہ کی حکومت کا کہنا ہے کہ سعودی عرب کی طرف سے مالی امداد کا سلسلہ طویل المدتی عمل ہے اور اس کا ایران کے ساتھ تعلقات منقطع کرنے کے ساتھ کوئی واسطہ نہیں ہے، تاہم نیوز ایجنسی کا کہنا ہے کہ سیاسی تجزیہ کار صومالیہ اور ایران کے تعلقات میں تعطل کو سعودی عرب کی خطے میں ایران کے خلاف حمایت جمع کرنے کی مہم کا نتیجہ قرار دے رہے ہیں۔

مزید جانئے: مسلمان خواتین 30ماہ میں انگریزی سیکھیں یا پھر ملک چھوڑنے کی تیاری پکڑ لیں :ڈیوڈ کیمرون

روئٹرز کے مطابق کینیا میں واقعہ سعودی سفارتخانے کی طرف سے صومالیہ میں سعودی سفارتخانے کو بھیجی گئی دستاویز سے انکشاف ہوا ہے کہ دو کروڑ ڈالر کی بجٹ سپورٹ اور مزید تین کروڑ ڈالر کی سرمایہ کاری کا وعدہ کیا گیا ہے۔ یہ مبینہ دستاویز 7جنوری کو جاری کی گئی، یعنی جس دن صومالیہ نے ایران کے ساتھ تعلقات منقطع کئے، اور دستاویز کے مطابق مذکورہ دو گرانٹس سعودی ڈویلپمنٹ فنڈ کی طرف سے جاری کی جائیں گی۔

واضح رہے کہ صومالیہ نے سعودی عرب اور ایران کے درمیان حالات کشیدہ ہونے کے بعد یہ کہتے ہوئے ایران کے ساتھ تعلقات منقطع کردئیے تھے کہ اس کی طرف سے صومالیہ کے اندرونی معاملات میں مداخلت کی گئی تھی، اور ایرانی سفارتکاروں کو 72 گھنٹے میں ملک چھوڑنے کا حکم دے دیا گیا تھا۔

مزید :

بین الاقوامی -