بلے بازوں کی حفاظت کیلئے ہیلمٹ کا نیا قانون متعارف کرادیاگیا

بلے بازوں کی حفاظت کیلئے ہیلمٹ کا نیا قانون متعارف کرادیاگیا

دبئی (این این آئی)انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے بیٹنگ کے دوران بلے بازوں کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لیے ہیلمٹ کا نیا قانون متعارف کرادیا ہے ٗ خلاف ورزی کی صورت میں کھلاڑی کو ایک میچ کے لیے معطل کردیا جائے گا۔آئی سی سی کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق یکم جنوری 2017 کو بنائے گئے قوانی پر سختی سے عمل درآمد کا فیصلہ کیا گیا ہے جس کا باقاعدہ اطلاق یکم فروری 2017 سے ہوگا۔آئی سی سی کے قانون کے مطابق بیٹنگ کے دوران بلے باز کو ہیلمٹ پہننے کے حوالے سے کوئی پابندی نہیں تاہم اگر وہ ہیلمٹ پہننا چاہے تو اس کیلئے لازم ہوگا کہ وہ برطانوی معیار کے ہیلمٹ استعمال کریگا۔اگر بلے باز برطانوی معیار کا ہیلمٹ استعمال نہیں کرے تو اس کو دو مرتبہ وارننگ دی جائے گی جس کے بعد انھیں ایک میچ کے لیے معطل کردیا جائے گا۔آئی سی سی کے جنرل منیجر کرکٹ جیف الارڈیس کا کہنا ہے کہ اس قانون کا مقصد کھلاڑیوں کو دستیاب محفوظ ترین ہیلمٹ پہنانا ہے۔انہوں نے کہاکہ ہماری بنیادی ترجیح یہی ہے کہ تمام بلے باز محفوظ ترین ہیلمٹ استعمال کریں ورنہ انھیں سزا بھگتنی پڑیگی۔انھوں نے کہا کہ یہ خوشی کی بات ہے کہ اکثر بین الاقوامی کھلاڑیوں نے یکم جنوری سے متعلقہ ہیلمٹ پہننا شروع کردیا ہے تاہم کچھ ٹیموں نے نئے قانون پر عمل درآمد کے لیے مزید وقت مانگا۔واضح رہے کہ 2015 میں آسٹریلیا کے بلے باز فل ہیوز سرپر گیند لگنے کے بعد انتقال کرگئے تھے۔بنگلہ دیشی ٹیسٹ ٹیم کے کپتان مشفق الرحیم کو نیوزی لینڈ کے خلاف رواں ٹیسٹ سیریز کے پہلے میچ میں سرپر گیند لگنے کے باعث فوری طورپر ہسپتال منتقل کیا گیا ٗ ایک روز قبل اوپنر امرالقیس کو سر پر گیند لگی تھی اور انھیں میدان سے باہر لے جایا گیا تھا۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی