انجری کابہانہ، فٹ بالرزکے خلاف قانون سازی پرغور

انجری کابہانہ، فٹ بالرزکے خلاف قانون سازی پرغور

لندن ( آن لائن )انگلینڈ کی فٹ بال ایسوسی ایشن (ایف اے) ان کھلاڑیوں پر پابندی لگانے پر غور کررہی ہے جو مخالف کھلاڑی کی ٹکر کے بغیر بلاوجہ ڈائیو لگاتے ہیں یا انجری کا بہانہ کرتے ہیں۔ غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق ایف اے کے حکام اسی سلسلے میں اسکاٹ لینڈ کا دورہ کریں گے جہاں پر یہ قانون پہلے سے نافذالعمل ہے۔انگلینڈ میں اس وقت صرف پرتشدد واقعات پر کھلاڑیوں پر پابندی کا قانون موجود ہے۔دوسری جانب ایف اے کو نئے قانون کے اطلاق سے قبل انگلینڈ کی تمام فٹ بال ایسوسی ایشنز کی جانب سے معاہدے کی ضرورت ہوگی۔انگلش فٹ بال کلب برنلے کے سربراہ سین ڈائچے کا مانناہے کہ موقع پر پابندی لگانے سے فٹ بال میں جھوٹی ڈائیونگ کا خاتمہ 'چھ ماہ میں' ہوجائے گا۔

رابرٹ سنیڈگراس نے کرسٹل پیلس کے خلاف ہل کے لیے بغیر کسی کے چھونے کے گر کر پنالٹی حاصل کرنے پر معذرت کی تھی جبکہ ڈیلے ایلی نے اسپاٹ۔کک حاصل کی تھی اور اس میچ میں سوانسی کے خلاف ٹوٹنہم کو 0۔5 سے فتح حاصل ہوئی تھی۔دوسری جانب اسکاٹ لینڈ میں رواں سیزن کے آغاز میں ہیرٹ کے جمی والکر کو اسکاٹش پریمیئرلیگ کے ایک میچ میں سیلٹک کے خلاف جھوٹی ڈائیو لگا کر پنالٹی حاصل کرنے پر دو میچوں کی پابندی عائد کی گئی تھی۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی