شاہدرہ کے نومولود کا ہاتھ ہیٹر سے نہیں جھلسا ،پیدائشی نقص تھا،سلمان رفیق

شاہدرہ کے نومولود کا ہاتھ ہیٹر سے نہیں جھلسا ،پیدائشی نقص تھا،سلمان رفیق

لاہور(جنرل رپورٹر)وزیر برائے سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن خواجہ سلمان رفیق نے کہا ہے کہ طبی ماہرین کے مطابق شاہدرہ کے رہائشی خرم کے نومولود بچے کا ہاتھ ہیٹر سے نہیں جھلسا بلکہ پیدائشی نقص کی وجہ سے بچے کے ہاتھ کی انگلیوں میں گنگرین کی بیماری تھی و زیر صحت نے مزید کہا کہ بچے کو چلڈرن ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں سینئر ڈاکٹرز پر مشتمل میڈیکل بورڈ بچے کا علاج کر رہا ہے اور ڈاکٹرز کو نومولود بچے کا ہاتھ بچانے کے لئے آپریشن کر کے تین انگلیاں ہاتھ سے جدا کرنا پڑیں ۔ انہوں نے یہ بات چلڈرن ہسپتال میں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہی ۔ اس موقع پر میڈیکل ڈائریکٹر پروفیسر احسن وحید راٹھور اور دیگر ڈاکٹرز بھی موجود تھے ۔ خواجہ سلمان رفیق نے کہا کہ بچہ مکمل صحت یابی تک ہسپتال میں داخل رہے گا جبکہ اس کے والدین کو چلڈرن ہسپتال میں رہنے کے لئے پرائیویٹ کمرہ الاٹ کر دیا گیا ہے کھانا بھی ہسپتال انتظامیہ فراہم کرے گی ۔ اس موقع پر میڈیکل ڈائریکٹر پروفیسر احسن وحید راٹھور نے بتایا کہ نومولود بچے کو زیر صحت کی ہدایت پر 16 جنوری کی رات کو سرگنگا رام ہسپتال سے چلڈرن ہسپتال منتقل کیا گیا تھا جس کے علاج کے لئے فوری طور پر میڈیکل بورڈ تشکیل دیا گیا جس میں پروفیسر سلیم ، پروفیسر خواجہ عرفان ، ڈاکٹر نبیلہ اور ڈاکٹر سعیدہ شامل ہیں ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1