سنکیانگ میں بچوں کو دو لسانی تعلیم دینے کا منصوبہ

سنکیانگ میں بچوں کو دو لسانی تعلیم دینے کا منصوبہ

ارومچی (این این آئی)چین کے شمال مغربی خود مختار علاقے سنکیانگ کی انتظامیہ کنڈرگارٹن سکولوں میں بچوں کو دو لسانی تعلیم کا منصوبہ بنا رہی ہے تا کہ دیہی علاقوں میں بچوں کو تین سال تک دو زبانوں میں تعلیم دی جا سکے ، اس منصوبے کے تحت پانچ لاکھ ساٹھ ہزار بچوں کو تعلیم دی جائے گی ۔مقامی محکمہ تعلیم کے مطابق 4387دو لسانی کنڈر گارٹن علاقہ بھر میں یا تو نئے تعمیر کئے جائیں گے یا جنوبی سنکیانگ کے تعمیر شدہ سکولوں میں مزید توسیع کی جائے گی ، اس کے لئے 3223سکول بنائے جائیں گے ، حکومت ان سکولوں میں عملہ بھرتی کرنے کی حوصلہ افزائی کرے گی اور مزید فنڈ بھی استعمال کرے گی ۔یاد رہے کہ چین میں نو سالہ تعلیم لازمی اور مفت ہے جبکہ سنکیانگ میں کنڈر گارٹن اور سینئر ہائی سکولوں میں تعلیم مفت ہے ، سنکیانگ میں 2011ء سے 2015ء تک دو زبانوں میں تعلیم دینے والے 2500نئے سکول تعمیر کئے گئے.

جبکہ ان میں چار لاکھ اسی ہزار بچے پری سکول تعلیم حاصل کررہے ہیں ، مرکزی حکومت کے تعاون سے سنکیانگ کی حکومت اب دو زبانوں میں پری سکول کی تین سالہ تعلیم کا منصوبہ بنا رہی ہے جس پر 2020ء تک عمل کیا جائے گا ۔

مزید : عالمی منظر