گوانتانامو سے دس قیدی عمان پہنچا دئیے گئے

گوانتانامو سے دس قیدی عمان پہنچا دئیے گئے

مسقط(این این آئی)بدنام زمانہ امریکی جیل گوانتاناموسے دس قیدیوں کو خلیجی عرب ریاست عمان پہنچا دیا گیا ۔ ان قیدیوں کی قومیتیں ظاہر نہیں کی گئیں لیکن ان کی منتقلی کی عمان کی وزارت خارجہ نے تصدیق کر دی۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق کیوبا کے جزیرے پر خلیج گوانتانامو کے امریکی فوجی حراستی مرکز سے عمان منتقل کیے جانے والے ان قیدیوں کو فی الحال عبوری طور پر عمان میں رکھا جائے گا لیکن اس بارے میں کوئی وضاحت نہیں کی گئی کہ مستقل طور پر ان افراد کو کہاں رکھا جائے گا، جو مشتبہ دہشت گردوں کی حیثیت سے برسوں تک گوانتانامو کی جیل میں امریکی فوج کی حراست میں رہے۔ان دس قیدیوں کی گوانتانامو کیمپ سے عمان منتقلی ایک ایسے وقت پر عمل میں آئی ہے، جب امریکی صدر باراک اوباما کے عہدہ صدارت کی دوسری مدت چند روز بعد بیس جنوری کو اپنے اختتام کو پہنچ رہی ہے۔ اوباما نے وعدہ کیا تھا کہ وہ اپنے دور صدارت میں گوانتانامو کا یہ حراستی مرکز بند کر دیں گے، تاہم مختلف وجوہ کی بناء پر وہ اپنا یہ اعلانیہ ہدف حاصل کرنے میں ناکام رہے۔مسقط سے موصولہ رپورٹوں میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ ان دس قیدیوں کی منتقلی کے بعد اب گوانتانامو کی جیل میں موجود باقی قیدیوں کی تعداد 45 رہ گئی۔پینٹاگون کے مطابق اس سال پانچ جنوری تک اس کیمپ میں پچپن قیدی باقی بچے تھے،یہ اندازہ امریکی محکمہ دفاع کے اس بیان کی روشنی میں لگایا گیا ہے۔

، جس کے مطابق اسی مہینے چھ جنوری کے روز جب یمن سے تعلق رکھنے والے گوانتانامو کے چار قیدیوں کو کیوبا کے جزیرے سے سعودی عرب منتقل کیا گیا تھا، تو پینٹاگون نے کہا تھا کہ تب اس امریکی فوجی کیمپ میں موجود قیدیوں کی تعداد 55 رہ گئی تھی۔عمان کی وزارت خارجہ کے جاری کردہ ایک بیان کے مطابق ان قیدیوں کو اس خلیجی عرب ریاست نے امریکی صدر باراک اوباما کی خصوصی درخواست پر اپنے ہاں قبول کیا۔ قیدیوں کی اس منتقلی کے بارے میں خود پینٹاگون نے کچھ بھی کہنے سے احتراز کیا۔

مزید : عالمی منظر