یورا لوجیکل سٹنٹ کا بھی بھیانک سکینڈل سامنے آگیا،ہسپتال انتظامیہ کی ملی بھگت سے 500والا غیر معیاری سٹنٹ ساڑھے 7ہزار میں لگانے کا انکشاف

یورا لوجیکل سٹنٹ کا بھی بھیانک سکینڈل سامنے آگیا،ہسپتال انتظامیہ کی ملی ...

لا ہور (جنرل رپورٹر )د ل کے سٹنٹ سیکنڈل کے بعد امرا ض گردہ اور مثانہ کی نا لیا ں کھولنے کیلئے استعما ل کئے جا نیو الے یورالوجیکل سٹنٹ کا بھیا نک فراڈ بھی سامنے آ گیا ہے ۔روز نا مہ پا کستا ن کی تحقیقاتی ر پو رٹ کے مطا بق لا ہور کے سر کا ر ی ہسپتا لو ں سمیت ملک بھر کے تما م مرا کزصحت میں یورا لو جی کے شعبہ میں غیر رجسٹر رڈ اور غیر معیاری سٹنٹ استعما ل کئے جا ر ہے ہیں یہا ں تک کے سر کا ر ی ہسپتا لو ں کی انتظامیہ نے من پسند کمپنیو ں سے ما ر کیٹ کی قیمت سے 5سوسے 1ہزار گنا زائدر یٹ پریورا لو جی کے سٹنٹ خر ید ے کمپنیا ں ہسپتا لو ں کی انتظا میہ کی ملی بھگت سے بھا ر ت اور چا ئنہ سے تین سو سے پا نچ سو رو پے فی سٹنٹ خرید کر یورپ اور امر یکن کمپنیو ں کے سٹنٹ ظا ہر کے ہسپتا لو ں کو پا نچ ہزار سے 77سوتک فی سٹنٹ فرو خت کرتی ر ہی ۔ ایسا کر کے گزشتہ دس سالو ں میں کمپنیا ں مر یضو ں سے اربو ں رو پے کا فرا ڈ کر چکی ہیں ۔ ر پو رٹ کے مطا بق پو ر ے ملک میں سپلا ئی کے جا نے والے مذکور ہ سٹنٹ میں سے کسی ایک کمپنی کا سٹنٹ ر جسٹر رڈ نہیں ہے ۔ ایسے غیر ر جسٹررڈ اور غیر معاوری یورا لو جی سٹنٹو ں کی بڑ ی منڈیا ں لا ہور ، کرا چی ، راولپنڈ ی ، فیصل آبا د اور ملتا ن سمیت پشاور ہیں۔ لا ہور کے تما م سر کا ر ی اور نجی ہسپتا لو ں میں یہ مکروہ د ھند ہ ہور ہا ہے جہا ں سے گردہ ، مثا نہ کی بند نا لیا ں کھو لنے کیلئے پیشاب کی بند ش اور پروسٹیٹ کی پرو سیجرزمیں یہ سٹنٹ استعما ل کیا جا تا ہے۔ ر پو رٹ کے مطا بق لاہور سمیت صو بہ پنجا ب کے د یگر سر کا ر ی اور نجی ہسپتا لو ں میں 16کے قریب مختلف کمپنیا ں یورا لو جی سٹنٹ سپلا ئی کر رہی ہیں ۔ اور مختلف نا مو ں سے سپلا ئی کئے جا نے والے تما م سٹنٹ ر جسٹررڈ ہیں اور نہ ہی ڈر گ ر یگولیٹر ی اتھا رٹی نے ان کے ر یٹ مقر ر کئے ہیں ۔ رپورٹ کے مطا بق لاہور کے ہسپتا لو ں سمیت د یگر شہر و ں کے ہسپتا لو ں میں کمپنیاں بھا رت اور چا ئنہ سے سستے دا مو ں یہ سٹنٹ منگواتی ہیں جو چور ر استو ں کے ذر یعے آتے ہیں ۔ بغیر نامو ں اور پیکنگ کے کلوگرام کے حساب سے سٹنٹ منگوائے جا تے ہیں اور خود ہی یو رپ اور امر یکن کمپنیو ں کے نا مو ں سے پیکنگ کرکے ہسپتا لو ں کو سپلا ئی کر دئیے جا تے ہیں یہ د ھند ہ سر کا ر ی ہسپتا لو ں کی انتظا میہ کے علم میں لیکن انتظا میہ مرا عات لیکر خاموش ر ہتی ہے ۔ یہ بھی معلوم ہواہے کہ یہ سٹنٹ مارکیٹ میں ایک ہزا ر رو پے سے 15سورو پے تک دستیا ب ہے مگر سر کا ر ی ہسپتا لو ں میں فی سٹنٹ 5سے 7ہزار رو پے میں خریدے جا تے ہیں ۔ اس حوالے سے بعض سر کا ر ی ہسپتا لو ں کے ڈا کٹروں کا کہنا ہے کہ یہ سٹنٹ غیر ر جسٹررڈ ہی نہیں غیر معیاری بھی ہیں اور اکثرفا ئد ے کے بجا ئے نقصا ن دیتے ہیں ۔ انہو ں نے کہا غر یب مر یضو ں سے کھلا فراڈ ہو ر ہا ہے ۔اس پر صو بائی وزیر صحت خواجہ سلیمان ر فیق کا کہنا ہے کہ اسکی تحقیقات ہو گئی اور با قاعد ہ کمیٹی تشکیل دی جا ئے گی۔

مزید : صفحہ اول