جماعت پنجم امتحانات ،نجی تعلیمی اداروں کے تحفظات اور مخالفت غیر ضروری ہے :پروفیسر محمد علی

جماعت پنجم امتحانات ،نجی تعلیمی اداروں کے تحفظات اور مخالفت غیر ضروری ہے ...

شیرگڑھ(نامہ نگار)کنٹرولر امتحانات مردان بورڈ پرو فیسر محمد علی خان نے کہا ہے کہ جماعت پنجم کے جائزہ امتحان پرنجی تعلیمی اداروں کے تحفظات اور مخالفت غیر ضروری ہے جائزہ امتحان سے سرکاری اور نجی تعلیمی اداروں کی کارکردگی اور اساتذہ کا معیار کھل کر سامنے آئیگاامتحان کے تمام اخراجات بورڈ برداشت کرے گا والدین کوئی اضافی رقم سکولوں کو ادا نہ کرے ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روزمردان اور گرد ونواح میں نجی اور سرکاری سکولوں کے اچانک معائنے کے بعد میڈیا کے نمائندوں کے ساتھ بات چیت کے دوران کیا انہوں نے کہا کہ بہت سے تعلیمی ادارے والدین سے مختلف سہولتوں کے نام پر فیسیں تو وصول کرتے ہیں لیکن سہولت تو درکنار ان کے کلاس رومز بیٹھنے کے قابل بھی نہیں ہوتے انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت سکولوں کی حالت بہتر بنانے،اساتذہ کے استعداد کار بڑھانے اور طلبہ کی ذہنی صلاحیتوں کو ابھارنے کے لئے پنجم جماعت سے جائزے کا امتحان لے رہی ہے جس سے یکساں نصاب تعلیم رائج کرنے میں مدد ملے گی اور طلباء کو جدید نظام تعلیم سے ہم آہنگ کیا جائیگا جو تعلیمی ادارے اس کی مخالفت کر رہے ہیں وہ دراصل اپنی ناکامی کو چھپانے کی کوشش کر رہے ہے اور طلبہ اور والدین کو اندھیرے میں رکھ رہے ہیں انہوں نے کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت امیر،غریب کے بچوں کو تعلیم کے یکساں مواقع دے رہے ہیں تاکہ طبقاتی نظام تعلیم کا خاتمہ ہو سکے اور طلبہ اپنے محنت اور قابلیت پر آگے بڑھ سکے انہوں نے کہا کہ اب تک بورڈ کو 92فیصد ڈیٹا موصول ہو چکا ہے جس میں صوبائی وزیر تعلیم اور مردان بورڈ کے چیر مین مشتاق احمد نے اہم کردار ادا کیا

مزید : پشاورصفحہ آخر