”اگرجنسی ہراساں کیا گیا تو آپ نے نوکری کیوں نہیں چھوڑی “

”اگرجنسی ہراساں کیا گیا تو آپ نے نوکری کیوں نہیں چھوڑی “
”اگرجنسی ہراساں کیا گیا تو آپ نے نوکری کیوں نہیں چھوڑی “

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )پاکستان ٹیلی ویژن کی تحقیقاتی کمیٹی نے اینکر پرسن تنزیلہ مظہر کو نوکری چھوڑنے کا اشارہ کرتے ہوئے شرمناک سوالات کی بوچھا ڑ کردی۔ 

تفصیلات کے مطابق اینکر پاکستان ٹیلی ویژن کی اینکر پرسن تنزیلہ مظہر نے مسعود شورش کے خلاف جنسی ہراسگی کی درخواست دائر کر رکھی تھی جس پر تحقیقاتی کمیٹی قائم کی گئی ۔

آپ کے گھر میں موجود وہ چیز جو چپکے سے آپ کی جان لے سکتی ہے

کمیٹی کے ارکان نے ملزم کے خلاف تحقیقات کرنے اور سوالات کرنے کی بجائے الٹا متاثرہ اینکر پرسن پر ہی شرمناک ترین سوالات کی بوچھاڑ کر دی ۔

درخواست گزار اینکر پرسن تنزیلہ مظہر نے اپنے ٹویٹر پیغام میں انکشاف کیا ہے کہ پی ٹی وی کی کیمٹی نے ان سے سوال کیا کہ اگر آپ کو جنسی ہراساں کیا گیا تھا تو آپ نوکری کیوں نہیں چھوڑ ی ؟.

مزید : ڈیلی بائیٹس