’’پدماوت‘‘ اور سنجے لیلا بھنسالی کی مشکلات ابھی ختم نہیں ہوئیں

’’پدماوت‘‘ اور سنجے لیلا بھنسالی کی مشکلات ابھی ختم نہیں ہوئیں
 ’’پدماوت‘‘ اور سنجے لیلا بھنسالی کی مشکلات ابھی ختم نہیں ہوئیں

  


رتلام(مانیٹرنگ ڈیسک)فلم پدماوت اور سنجے لیلا بھنسالی کی مشکلات ابھی ختم نہیں ہوئیں اشتعال انگیز ہندو انتہا پسندوں نے فلم پدماوت کا غصہ اسکول پر اتارتے ہوئے ہنگامہ مچایا اور اسکول میں توڑ پھوڑ کی۔ہدایت کار سنجے لیلا بھنسالی اور دپیکا پڈوکون کی فلمپدماوتکی پچھلی مشکلات ابھی ختم نہیں ہوئی تھیں کہ ایک نئی مصیبت کھڑی ہوگئی۔ فلم ابتدا ہی سے بھارتی ہندو انتہا پسندوں کو ایک نہیں بھارہی، فلم کی ریلیز کی صورت میں کرنی سینا سمیت متعدد ہندو انتہا پسند جماعتوں نے سنجے لیلا بھنسالی اور دپیکا پڈوکون کو دھمکی دی تھی کہ اگر فلم ریلیز ہوئی تو انجام اچھا نہیں ہوگا۔ انتہا پسندوں کے فلم پر دو بڑے اعتراض ہیں جس کی وجہ سے وہ فلم کی ریلیز میں رکاوٹ بن رہے ہیں۔ یہ اعتراض اتنی زیادہ شدت اختیار کرگیا ہے کہ مدھیہ پردیش کے شہر رتلام کے سینٹ پول کانونٹ اسکول میں فنکشن کے دوران جب ننھی طالبات نے اس گانے پر پرفارم کیا تو ہندو انتہا پسندجماعت شیری راجپوت کرنی سینا سے تعلق رکھنے والے افراد نے اسکول پر حملہ کردیا اور اسکول میں توڑ پھوڑ مچائی۔

اسکول انتظامیہ کی جانب سے اطلاع کرنے پر پولیس فورا اسکول پہنچی اور مشتعل مظاہرین کو منتشر کیا، تاہم اس واقعے میں ایک طالبعلم زخمی ہوگیا جسے طبی امداد فراہم کردی گئی۔

مزید : کلچر


loading...