حکومت ریلیف تو دور مارکیٹوں کو درپیش مسائل بھی حل نہ کر سکی : میاں سلیم

حکومت ریلیف تو دور مارکیٹوں کو درپیش مسائل بھی حل نہ کر سکی : میاں سلیم

لاہور (فورم رپورٹ :اسد اقبال ۔ تصاویر عمر شریف)تاجر طبقہ ملکی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے جو ملک میںآنے والی قدرتی آفات اور سانحات میں حکومت کے ساتھ ہر قسم کاتعاون سمیت ملکی معیشت کے پہیے کو گھمائے حکمرانوں کے شاہانہ اخراجات مختلف ٹیکسز کی صورتوں میں پورے کر رہا ہے تاہم اس کے باوجود تاجر برادری حکومت کی جانب سے کسی بھی قسم کے ریلیف سے تودور لاہور کی مارکیٹوں کو درپیش مسائل کو بھی حل نہ کر سکی ہے ۔تاجر برادری مو جودہ معاشی نظام اورزبر دستی عائد کردہ ودہولڈنگ ٹیکس سے پریشان حال ہے ۔ان خیالات کا اظہارمعروف تاجررہنماء اور انجمن تاجران لاہور کے جوائنٹ سیکرٹری میاں سلیم نے گزشتہ روز "پاکستان فورم "میں کیا ۔ انہوں نے کہا کہ ملکی معیشت کا 45فیصد ریو نیو تاجر طبقہ ادا کر تا ہے جو اس ملک کی باگ دو ڑ چلا رہا ہے جس نے ملک میں زلزلہ آئے یا سیلاب یا کوئی قدرتی آفت تاجروں نے ہی ہر مشکل گھڑی میں اپنے پاکستانی بھائیوں او ر بہنوں کی بڑھ چڑھ کر خدمت کی اوردکھ کی گھڑی میں برابر کے شریک رہے ۔انہوں نے کہا کہ حکمران طبقہ نے کبھی تاجر برادری کو کوئی ریلیف نہیں دیا بلکہ مختلف ٹیکسز لگا کر خون نچوڑا گیا ۔اس کے باوجو د تاجروں کو چوسمجھا جاتا ہے جبکہ درحقیقت سب سے بڑے چور سیاستدان ہیں جو ٹیکسز ادا نہیں کرتے ۔میاں سلیم نے کہا کہ حکومت تاجروں پر عائد کر دہ ودہولڈنگ ٹیکس واپس لے جس کی مثال دنیا بھر میں نہیں ملتی ۔انہوں نے کہاکہ تاجر برادری متحد ہے اوراشرف بھٹی انجمن تاجران پاکستان کے تاحیات صدر جبکہ میاں طارق فیروز پر لاہور کی تاجر برادری بھرپور اعتماد کا اظہار کرتی ہے ۔ میاں سلیم نے بتایا کہ وفاقی وزیرخزانہ اسحاق ڈار سے ہماری آخری میٹنگ اسلام آباد میں ہوئی جس میں انہوں نے تاجر طبقہ کے مسائل کو بالائے طاق رکھتے ہوئے صرف اس بات پر زور دیا کہ حکومت صرف ریو نیو چاہتی ہے لہذا کاروباری طبقہ کو ٹیکس دینا ہو گا ۔ ان کا کہنا تھا کہ حکمرانوں کے مضبوط معیشت کے دعوے خام خیالی کے سوا کچھ نہیں۔ حقیقت میں ملک میں غربت، مہنگائی اور بے روزگاری میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے اور کاروباری سر گر میاں مفلو ج الحا ل ہو نے سے مارکیٹو ں میں ہو کا عالم اور تاجر اپنے اخر اجات پورے کرنے سے قاثر ہیں ۔انہوں نے کہا کہ مو جو دہ حکومت کے بلند و بالا دعو ے بھی کھو کھے ثا بت ہو ئے ۔ تاجروں کی امید یں رائیگا ں گئی اور تاجرطبقہ کاروباری ریلیف سے بنی محروم رہا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...