ڈار اشتہاری برقرا ر ، احتساب عدالت کے فیصلے کیخلاف درخواست مسترد

ڈار اشتہاری برقرا ر ، احتساب عدالت کے فیصلے کیخلاف درخواست مسترد

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک ،صباح نیوز) اسلام آباد ہائیکورٹ نے سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی جانب سے انہیں اشتہاری قرار دینے کے خلاف دائر درخواست کو خارج کرتے ہوئے احتساب عدالت کا فیصلہ برقرار رکھا ہے جب کہ سابق وزیر خزانہ کے خلاف عدالتی کارروائی پر حکم امتناع بھی ختم کردیا۔ اسحاق ڈار کے خلاف آمدن سے زائد اثاثوں کا ریفرنس اسلام آباد کی احتساب عدالت میں زیر سماعت ہے جس میں مسلسل غیر حاضری پر عدالت انہیں اشتہاری ملزم قرار دے چکی ہے۔اسلام آباد ہائیکورٹ میں اسحاق ڈار نے ایک درخواست دائر کی تھی جس میں احتساب عدالت کی جانب سے انہیں اشتہاری قرار دینے کا فیصلہ کالعدم قرار دینے کی استدعا کی تھی۔ جسٹس اطہر من اللہ اور جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب پر مشتمل 2 رکنی بینچ نے اسحاق ڈار کی درخواست پر سماعت کی۔ڈارکی حاضری سے استثنا کی درخواست بھی مسترد کردی گئی ہے۔دوران سماعت جسٹس اطہر من اللہ نے استفسار کیا کہ کیا درخواست گزارواپس آگئے ہیں؟ اس پر اسحاق ڈار کے وکیل نے بتایا کہ ڈاکٹر نے تو اسحاق ڈار کو سفر کرنے سے منع کیا ہے۔جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیئے کہ کیا پاکستان میں سرجری کی سہولت دستیاب نہیں ہے؟ یا تو اسحاق ڈار کو کوئی ایسی بیماری ہو کہ پاکستان نہ آسکیں۔ علاوہ ازیں اسحاق ڈار نے اسلام آباد ہائیکورٹ میں متفرق درخواست دائر کردی جس میں ان کی میڈیکل رپورٹ بھی لگائی گئی ہے۔میڈیکل رپورٹ کے مطابق اسحاق ڈار کو گردن میں تکلیف ہے اور وہ اس تکلیف کے باعث دائیں بازو میں بھی درد محسوس کررہے ہیں۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ اسحاق ڈار 11 جنوری کو طبی معائنے کے لیے لندن اسپائنل سینٹر آئے، انہیں درد کی کمی کے لیے دوائیں تجویز کی گئی ہیں۔رپورٹ میں تجویز کیا گیا ہے کہ اسحاق ڈار طویل سفر اور جسمانی مشقت کے کاموں سے گریز کریں ۔

ڈار

مزید : صفحہ آخر


loading...