ماڈل ٹاؤن واقعہ کی مذمت کرنیوالوں کو سانحہ 12مئی کی بھی مذمت کرنا ہو گی : محمود اچکزئی

ماڈل ٹاؤن واقعہ کی مذمت کرنیوالوں کو سانحہ 12مئی کی بھی مذمت کرنا ہو گی : محمود ...

اسلام آباد (آئی این پی)پختونخوا ملی عوامی پارٹی کے سربراہ محمود خان اچکزئی نے کہا کہ لاہور احتجاج 2014کے دھرنوں کا تسلسل ہے، طاہر القادری اور عمران خان نے پارلیمنٹ پر حملہ کیا ہے، یہ مجرم ہیں ان کے خلاف تحقیقات نہیں ہو رہی ہیں، طاہر القادری کا حق ہے کہ وہ انصاف کا مطالبہ کرے، ہم ان تمام قوتوں کے مخالف ہیں جو پاکستان کے آئین کی مخالفت کرے گا، ججز، جرنیل، ممبران پارلیمنٹ آئین کے مطابق حلف اٹھاتے ہیں،کرپشن بڑی بیماری ہے، مل بیٹھ کر اس کا علاج دریافت کرنا ہوگاسانحہ ماڈل ٹاؤن واقعے کی اگر کوئی مذمت کرتا ہے تو اسے 12مئی کے واقعہ کی بھی مذمت کرنی ہو گی‘ جہاں 6گھنٹے تک گولیاں چلائی گئیں، ایک انسان کا قتل پوری انسانیت کیلئے لمحہ فکریہ ہے،لوگوں کے سر پر نواز شریف سوار ہے، امریکی صدر کے بیانات پر سوچنا چاہیے، اگر نواز شریف آئین سے روگردانی کرے گا تو سب سے پہلے ہم خلاف ہوں گے۔وہ بدھ کو پارلیمنٹ ہاؤس اسلام آباد میں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کر رہے تھے ۔ محمود خان اچکزئی نے کہا کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن واقعے کی اگر کوئی مذمت کرتا ہے تو اسے 12مئی کے واقعہ کی بھی مذمت کرنی ہو گی‘ جہاں 6گھنٹے تک گولیاں چلائی گئیں، ایک انسان کا قتل پوری انسانیت کیلئے لمحہ فکریہ ہے،لوگوں کے سر پر نواز شریف سوار ہے، امریکی صدر کے بیانات پر سوچنا چاہیے، اگر نواز شریف آئین سے روگردانی کرے گا تو سب سے پہلے ہم خلاف ہوں گے، چھ گھنٹے تک بارہ مئی کو گولیاں چلائی گئیں،وکیلوں کو جلایا گیا، بارہ مئی کے حوالے سے ہمارے سوا کوئی نہیں بولا

محمود اچکزئی

مزید : علاقائی


loading...