8 ریٹائرڈ ججوں کو پینشن نہ دینے پرسیکرٹری قانون 15فروری کو طلب

8 ریٹائرڈ ججوں کو پینشن نہ دینے پرسیکرٹری قانون 15فروری کو طلب

لاہور(نامہ نگار خصوصی) چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ منصورعلی شاہ نے عدالت عالیہ کے 8 ریٹائیرڈ ججوں کو پینشن اور بقایہ جات نہ دینے پر ایڈووکیٹ جنرل پنجاب اور سیکرٹری قانون کو 15فروری کو طلب کرلیا ہے۔چیف جسٹس نے جسٹس ریٹائیرڈ ریاض کیانی سمیت 8 ریٹائیرڈ ججوں کی درخواست پرسماعت کی،درخواست گزار کے وکیل نے موقف اختیار کیاکہ جسٹس ریٹائرڈ ریاض الدین احمد، سعیدالرحمن فرخ، ریاض کیانی منصور احمد، شیخ جاوید سرفراز،سید اصغر حیدر،طارق شمیم اورالطاف ابراہیم قریشی کو بقایاجات ادا نہیں کئے جارہے ۔انہوں نے1998 ء سے 2015 ء تک لاہور ہائیکورٹ میں بطور جج فرائض سر انجام دئیے،درخواست گزار کے وکیل نے بتایاکہ اکاؤنٹنٹ جنرل آفس نے 7 ججوں کو ملنے والی پینشن روک دی ہے جبکہ ایک ریٹائیرڈ جج کو پینشن اداکرنے کا عمل ہی شروع نہیں کیا گیا ،عدالت اکاؤنٹنٹ جنرل آفس کو پینشن اور دیگر واجبات کی ادائیگی کا حکم دے،عدالت نے درخواسث پر ایڈووکیٹ جنرل پنجاب اور سیکرٹری قانون کو 15فروری کو طلب کرتے ہوئے سماعت ملتوی کردی۔

مزید : علاقائی


loading...