نئے چیف جسٹس کو بھی عوامی مسائل پرازخود نوٹس لینے چاہئیں،آئینی ماہرین

نئے چیف جسٹس کو بھی عوامی مسائل پرازخود نوٹس لینے چاہئیں،آئینی ماہرین

  

لاہور( جنرل رپورٹر) مختلف آئینی ماہرین اور سینئروکلا نے کہاہے کہ ملک کے نئے چیف جسٹس کواپنے پیش روکی روایات کو قائم رکھنا چاہئے اور عام آدمی کوان کی دہلیز پرانصاف کی فراہمی کویقینی بنانے کیلئے زیادہ سے زیادہ مسائل پرازخود نوٹس لینے چاہئیں۔روزنامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے اظہرصدیق ایڈووکیٹ نے کہاکہ سابق چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس (ر) ثاقب نثارکادورملکی تاریخ میں سنہری حروف سے لکھاجائے گا۔انہوں نے کہاکہ سابق چیف جسٹس کے دورمیں عدلیہ کے وقار میں اضافہ ہواہے لہٰذا ہم نئے چیف جسٹس پاکستان سے امیدرکھتے ہیں کہ غریبوں کو انصاف دلانے اور کرپٹ مافیا کے خلاف ان کے اقدامات بھی ننگی تلوار ثابت ہوں گے۔ہائی کورٹ کے سینئروکیل افتخارچودھری نے کہا ہے کہ امید ہے نئے چیف جسٹس ملک سے کرپشن کے خاتمے کیلئے اپناکرداراداکرتے ہوئے باراوربنچ کے تقدس کیلئے عملی اقدامات کریں گے۔ ممتاز قانون د ان محمد اویس نے کہاکہ نئے چیف جسٹس کو ڈیمز کی تعمیر سمیت سابق چیف جسٹس کے اقدامات پرعمل درآمد کراناہوگا ۔

آئینی ماہرین

مزید :

صفحہ اول -