لیبرڈیپارٹمنٹ کاغذی کارروائیوں تک محدود ‘ مانیٹرنگ کا عمل ٹھپ ‘ عوام لٹنے پر مجبور

لیبرڈیپارٹمنٹ کاغذی کارروائیوں تک محدود ‘ مانیٹرنگ کا عمل ٹھپ ‘ عوام لٹنے ...

  

ملتان(سٹی رپورٹر)لیبرڈیپارٹمنٹ محض کاغذی حدتک محدود ہوکر رہ گیا ، لیبرڈیپارٹمنٹ کی مجرمانہ خاموشی سال 2018 میں بھی برقرار رہی اور اب سال نو میں بھی سردمہری برقرار، اوزان کی پیمائش کے حوالے سے ایک بھی قدم نہیں اٹھایا گیا ، باٹ کے بعد کمپیوٹرائزڈ کنڈے میں بھی مس فیڈنگ کا عمل جاری ، ناپ تول میں شہری لٹنے پر مجبور ، افسران خاموش اور غائب ،عام دوکانوں ، جنرل سٹورز وغیرہ(بقیہ نمبر40صفحہ12پر )

سے لے کر پیٹرول پمپ تک ناپ تول کی مانیٹرنگ کا عمل کا سرے سے وجود ہی نہیں رہا ، محکمہ لیبر کی کارکردگی صفر افسران قومی خزانے سے بھاری بھرکم تنخواہیں لینے کے باوجود عوام کو سہولیات کی فراہمی ، مانیٹرنگ کرنے میں مکمل غیر فعال ہو کر رہ گئے۔ملز مالکان کا مزدوروں سے مشقت کے حساب سے معاوضہ بہت کم دینے کا ریکارڈ برقرار اس حوالے سے لیبر افسران سے لے کرعام اہلکاروں تک مک مکامیں ملوث ہونے کے باعث کاروائی سے گریزاں ، لیبر ڈیپارٹمنٹ کی انتہائی ناقص کارکردگی پر کمشنر اور ڈی سی کی بھی خاموشی برقرار ہے جس کے باعث ملز ،فیکٹریوں میں مزدور اپنے مالکان کے ظلم کی چکی میں پس رہاہے ، عوام پیٹرول پمپ ، کمپیوٹرائزڈ کنڈے پر غلط فیڈ شدہ اوزان کے باعث کم مقدارمیں پیٹرول لینے پرمجبور ہے ، بازاروں ، جنرل سٹور ز ، بڑی بیکریوں پر خود پیک کردہ سامان جو کہ کم وزن مگر پیسے پورے وزن کے لئے جارہے ہیں اس پر مانیٹرنگ کا کوئی عمل موجود نہیں ،اور تو اور افسران دفاتر میں بھی کم دکھائی دیتے ہیں حاضری لگاکر فیلڈ میں موجود ہونے کا بہانہ عام ہو چکاہے کیونکہ فیلڈ سے کوئی کاروائی ، کارکردگی دیکھنے کو نہیں آرہی ، اس ابتر صورتحال کا افسران بالا ، ڈی سی وکمشنرکوضرور نوٹس لینا چاہئے ۔

لیبر ڈیپارٹمنٹ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -