رکن صوبائی اسمبلی سلمان نعیم کی نااہلی کا کیس، وکیل کے پیش نہ ہونے پر سماعت 23جنوری تک ملتوی

رکن صوبائی اسمبلی سلمان نعیم کی نااہلی کا کیس، وکیل کے پیش نہ ہونے پر سماعت ...

  

ملتان(خبرنگارخصوصی )ہائیکورٹ ملتان بینچ نے ممبر صوبائی اسمبلی سلمان نعیم کی نااہلی کے فیصلے کے خلاف درخواست پر وکیل کے پیش نہیں(بقیہ نمبر51صفحہ12پر )

ہونے پر سماعت 23 جنوری تک ملتوی کرنے کا حکم دیا ہے۔ فاضل عدالت میں حلقہ پی پی 217 ملتان سے ایم پی اے سلمان نعیم نے درخواست دائر کی تھی کہ درخواست گذار کو حلقہ سے بطور آزاد امیدوار کامیاب قرار دیا گیا جس کا الیکشن کمیشن کی جانب سے نوٹیفکیشن بھی جاری کر دیا گیا تھا اور اس نے بطور ممبراسمبلی کام شروع کر دیا تاہم نوید ارائیں نامی شخص نے الیکشن کمیشن میں درخواست دائر کی کہ درخواست گذار کے پاس دو شناختی کارڈ ہیں اور اپنے اثاثے بھی درست طور پر ظاہر نہیں کئے ہیں جس پر الیکشن کمیشن نے درخواست گذار کے کم عمر ہونے اور دو شناختی کارڈ ہونے کا جواز بنا کر یکم اکتوبر کو نااہل قرار دیا تھا جبکہ کامیابی کا اعلان ہونے کے بعد الیکشن کمیشن کے پاس درخواست گزار کو نااہل کرنے کا اختیار حاصل نہیں تھا اور نااہلی کا فیصلہ دینے کا اختیار صرف الیکشن ٹربیونل کے پاس ہے جس میں انتخابی عذرداریوں کی سماعت جاری ہے اس لئے الیکشن کمیشن کی جانب سے درخواست گذار کی نااہلی کے فیصلے کو کالعدم قرار دینے کا حکم دیا جائے۔ اس ضمن میں گذشتہ روز سماعت پر درخواست گذار کا وکیل لاہور سے نہیں آ سکا جس کی وجہ سے استدعا پر سماعت ملتوی کر دیا گیا ہے۔

سلمان نعیم

مزید :

ملتان صفحہ آخر -