”روٹی کی قیمت میں اضافے کی اجازت نہیں دیں گے البتہ روٹی کا وزن۔۔۔ “صوبائی وزیر شوکت یوسفزئی نے ایسی بات کہہ دی کہ پاکستانی ہکا بکا رہ گئے

”روٹی کی قیمت میں اضافے کی اجازت نہیں دیں گے البتہ روٹی کا وزن۔۔۔ “صوبائی ...
”روٹی کی قیمت میں اضافے کی اجازت نہیں دیں گے البتہ روٹی کا وزن۔۔۔ “صوبائی وزیر شوکت یوسفزئی نے ایسی بات کہہ دی کہ پاکستانی ہکا بکا رہ گئے

  



پشاور(ڈیلی پاکستان آن لائن)حکومت غریب کی روٹی تک رسائی بھی مشکل بنارہی ہے۔صوبائی وزیر شوکت یوسفزئی نے ایسی بات کہہ دی کہ پاکستانی ہکا بکا رہ گئے۔صوبہ خیبرپختونخوا کے وزیراطلاعات شوکت یوسفزئی نے ہوٹلوں کو روٹی کا وزن کم کرنے کا مشورہ دے دیا۔نجی ٹی وی کے مطابق شوکت یوسفزئی کہتے ہیں کہ وہ روٹی کی قیمت میں اضافے کی اجازت نہیں دینگے البتہ روٹی کا وزن کم کیاجاسکتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق حکومتی وزیر آئے دن غریب کا مذاق اڑاتے دکھائی دیتے ہیں، کوئی دو کے بجائے ایک روٹی کھانے کا مشورہ دے رہا ہے تو کوئی تندوریوں اور ہوٹل والوں کو روٹی کا وزن کم کرنے کا مشورہ دے رہا ہے،یہ مضحکہ خیز مشورہ دینے والی شخصیت کے پی کے کے وزیراطلاعات شوکت یوسفزئی ہیں جنہوں نے جیو نیوز کے مطابق بیان دیا ہے کہ روٹی کی قیمت بڑھانے کی اجازت نہیں دیں گے،روٹی کا وزن کم کرلیں۔

شوکت یوسف زئی کے بیان پرپاکستانی ہکا بکا رہ گئے ہیں اور سوشل میڈیا پر شدید تنقید بھی کی ہے۔

قمر نامی ایک صارف نے انہیں مشورہ دیا ہے کہ ’روٹی کا وزن کم نہ کریں5روپے والے گول پاپڑ کو سرکاری طور پر روٹی کا نام دیدیں‘ایک تو قیمت کم‘روٹی کی نسبت سائز بھی بڑا ہو جائیگا‘غریب خوش بھی ہوگا‘ تندور‘ہوٹلوں پر بوجھ ختم‘عوام کو گھر بیٹھے پاپڑ نما روٹی میسر ہو گی‘بس گلی میں پاپڑ کرارے کی جگہ روٹی کراری کی آواز لگانا پڑے گی‘۔

ایک اور صارف نے کہا ’ سب سے پہلے تو شوکت یوسفزءکی مراعات ختم کریں. پھر اس کی تمام منقولہ غیر منقولہ جائیداد ضبط کریں. اس کے بعد اس کا کاروبار بحق سرکار ضبط کیا جائے۔اور پھر اس سے 600 روپے دیہاڑی پر آٹے کی بوریاں ٹرک پر لوڈ کروائے جائیں۔اس کے 6 مہینے بعد پوچھا جائے کہ روٹی کا وزن اور قیمت کیا ہو؟۔

سردار عبدالرحمان نے لکھا

’زمین بیچ ڈالی ضمن بیچ ڈالا

لہو بیچ ڈالا بدن بیچ ڈالا

شجر بیچ ڈالے چمن بیچ ڈالا

کیے تھے وعدے زمین و مکاں کے

میری جائے مدفن کفن بیچ ڈالنا

میں روٹی اور کپڑے میں الجھا رہا

ایک نشئی نے میرا وطن بیچ ڈالا‘۔

نعمان نامی شخص نے لکھا’اگر شوکت یوسفزئی کے فارمولے پر عمل کیا جائے تو اس وقت دنیا کے تمام اقتصادی مسائل پر صرف ایک دن میں قابو پایا جاسکتا ہے اور اس سال کا اقتصادیات کا نوبل پرائز بھی ان کو مل سکتا ہے۔‘

مزید : قومی /علاقائی /خیبرپختون خواہ /پشاور