”کیاآٹے کی جگہ پر دہی کھایاجاسکتاہے“طارق فضل چودھری کاحکومت سے سوال

”کیاآٹے کی جگہ پر دہی کھایاجاسکتاہے“طارق فضل چودھری کاحکومت سے سوال
”کیاآٹے کی جگہ پر دہی کھایاجاسکتاہے“طارق فضل چودھری کاحکومت سے سوال

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) مسلم لیگ ن کے رہنما طارق فضل چودھری نے کہاہے کہ ٹماٹر مہنگا ہوگیا تھا تویہ بد انتظامی تھی جس پرایک حکومتی وزیر کی طرف سے کہا گیا کہ ٹماٹر کی جگہ پر دہی کھالیں لیکن اب آٹے کی جگہ پر تو دہی نہیں کھایا جاسکتا ۔

دنیا نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے طارق فضل چودھری نے کہا کہ اپوزیشن کاحکومت کے ساتھ بہت مثبت رویہ رہاہے ، اپوزیشن کا جتنا مثبت رویہ اس دور میں رہاہے ، اتنا کسی دور میں نہیں رہا ۔انہوں نے کہا کہ حکومت کی نظر میں معیشت بہتر ہوگئی ہے اور ہوئی ہے یا نہیں ہوئی یہ الگ بات ہے ۔

طارق فضل چودھری کا کہنا تھاکہ عوام کوجی ڈی پی کا پتہ نہیں ہوتا ، انتظامی اور گورننس کے مسائل کابھی معیشت سے دور دور تک کوئی تعلق نہیں ہے جیسے ٹماٹر مہنگا ہوگیا تھا تویہ ایک بد انتظامی تھی جس پر ایک وزیر کی جانب سے کہا گیا کہ ٹماٹر کی جگہ پر دہی کھالیں لیکن اب آٹے کی جگہ پر تو دہی نہیں کھایا جاسکتا ۔ انہوں نے کہا کہ یہ باتیں حکومت کے لئے مسائل کی وجہ بنیں گی، اپوزیشن پہلے دن سے ہی کہہ رہی ہے کہ حکومت عوام کے مسائل حل کرنے کے لئے جواچھی چیزیں لے کر آئے گی ، حمایت کریں گے ۔

مزید : قومی