براڈ شیٹ کے حوالے سے اسد عمر نے بڑے ثبوت شیئر کر دیئے

براڈ شیٹ کے حوالے سے اسد عمر نے بڑے ثبوت شیئر کر دیئے
براڈ شیٹ کے حوالے سے اسد عمر نے بڑے ثبوت شیئر کر دیئے
سورس:   File

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی وزیراسدعمر نے براڈ شیٹ کےمتعلق فیصلے کو شیئر کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ ڈاکومنٹس پی ٹی آئی حکومت یا نیب کے نہیں لکھے ہوئے یہ انگلینڈ کے جج نے لکھا ہے کہ شریف خاندان کی چھپائی دولت ڈھونڈنے کا معاوضہ 20.5 ملین ڈالر بنتا ہے۔ 

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اسد عمر نے اپنے بیان میں کہا کہ یہ صفحہ حکومت پاکستان کا لکھا ہوا نہیں اور نہ ہی یہ نیب کا لکھا ہے. یہ انگلینڈ کے جج کا لکھا ہوا ہے اور صاف الفاظ میں کہتا ہے کے شریف خاندان کی چھپائی ہوئی دولت جس میں لندن کے ایون فیلڈ فلیٹ شامل ہیں ان کو ڈھونڈنے کا معاوضہ 20.5 ملین ڈالر بنتا ہے جس کا حق دار براڈ شیٹ ہے۔۔

شریف خاندان کی جانب سے چھپائی گئی 100 ملین ڈالر یعنی 16 ارب روپے کی دولت ڈھونڈنے پر یہ 20 ملین معاوضہ ملا کیونکہ معاہدے کے مطابق 80٪ پاکستان اور 20٪ براڈشیٹ کو حصہ ملنا تھا۔ پاکستانی عوام سے 100 ملین ڈالر لوٹا اور اوپر 20 ملین ڈالر کا ہرجانہ کیونکہ شریف حکومت نے اثاثے واپس نہیں لیے۔

مزید :

قومی -