گورنر پنجاب کا یو ای ٹی لاہور کی سنڈیکیٹ کمیٹی اور وائس چانسلر کے خلاف بڑا فیصلہ،ڈپٹی رجسٹرار عابد عمر کو نوکری سے فارغ کرنے کا فیصلہ کالعدم قرار

گورنر پنجاب کا یو ای ٹی لاہور کی سنڈیکیٹ کمیٹی اور وائس چانسلر کے خلاف بڑا ...
گورنر پنجاب کا یو ای ٹی لاہور کی سنڈیکیٹ کمیٹی اور وائس چانسلر کے خلاف بڑا فیصلہ،ڈپٹی رجسٹرار عابد عمر کو نوکری سے فارغ کرنے کا فیصلہ کالعدم قرار

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)گورنر پنجاب کا یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی( یو ای ٹی)لاہور کی سنڈیکیٹ اور وائس چانسلر کے خلاف بڑا فیصلہ،ڈپٹی رجسٹرار عابد عمر کو نوکری سے فارغ کرنے کا فیصلہ کالعدم قرار۔

تفصیلات کے مطابق گورنر پنجاب اور یو ای ٹی کے چانسلر چوہدری محمدسرور نے ڈپٹی رجسٹرار عابد عمر کے خلاف وائس چانسلر اورسنڈیکیٹ کا فیصلہ انتقام اور یک طرفہ کارروائی پر مبنی قرار دیتے ہوئے تحریری فیصلہ جاری کردیا ہے ۔گورنر پنجاب کی جانب سے یو ای ٹی کا عابد عمر کو تیانجن یونیورسٹی میں بہ طور رجسٹرار جوائننگ سے روکنے کا فیصلہ بھی کالعدم قرار دیتے ہوئے عابد عمر کو تیانجن یونیورسٹی جوائن کرنے کی اجازت دے دی ہے۔گورنرپنجاب نے یو ای ٹی سنڈیکیٹ کی عابد عمر کے خلاف کارروائی کو منسوخ کرنے کا حکم عابد عمر اور یو ای ٹی رجسٹرار کی ذاتی شنوائی کے بعد فیصلہ جاری کیا ۔چوہدری محمد سرور نے پنجاب یونیورسٹی کی جانب سے عابد عمر کو جاری کردہ ملازمت کا سرٹیفکیٹ درست قرار دیتے ہوئے یو ای ٹی کے وائس چانسلر کو پنجاب یونیورسٹی کے امور میں مداخلت سے بھی روک دیا ہے جبکہ یو ای ٹی کا پنجاب یونیورسٹی کے خلاف انکوائری کمیٹی بنانا بھی خلاف قانون قرار دیا ہے۔یاد رہے کہ گورنر پنجاب اس سے قبل بھی یو ای ٹی سنڈیکیٹ کے فیصلہ کو کالعدم قرار دیا تھا۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -