’ اب ہم رہیں گے یا پیپلزپارٹی کی حکومت ‘مصطفی کمال نےدبنگ اعلان کردیا 

’ اب ہم رہیں گے یا پیپلزپارٹی کی حکومت ‘مصطفی کمال نےدبنگ اعلان کردیا 
’ اب ہم رہیں گے یا پیپلزپارٹی کی حکومت ‘مصطفی کمال نےدبنگ اعلان کردیا 

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)پاک سر زمین پارٹی (پی ایس پی )کے چیئرمین سید مصطفی کمال نے کہاہے کہ اب ہم رہیں گے یا پیپلزپارٹی کے ظلم، کرپٹ اور متعصب حکومت رہے گی، اہل کراچی میں اتنی طاقت ہے کہ اگر وہ ظالم حکومت کیخلاف میدان عمل میں آگئے تو ناصرف کراچی اور حیدرآباد بلکہ تمام سندھ کے ایک ایک چپے کے لوگوں کو پیپلزپارٹی کےجابرانہ، ظالمانہ اور وڈیرانہ نظام حکومت سےآزادی دلوا کر پیپلز پارٹی کی اگلی نسلوں کی حکمرانی کا خواب چکنا چور کرسکتے ہیں، یہی وجہ ہےکہ پیپلزپارٹی کراچی کو معاشی اور معاشرتی طور پر اتنا مفلوج کرنا چاہتی ہے کہ وہ نا اپنے لیے کھڑے ہوسکیں اور نا سندھ میں آباد اپنے بھائیوں کے لیے، پیپلز پارٹی یہ بات بہت اچھی طرح جانتی ہے کہ پی ایس پی کے ہوتے پیپلز پارٹی پاکستان کو نقصان نہیں پہنچا سکتی۔ ہم پہلے بھی وقت کے فرعون کے آگے ڈٹ گئے تھے، آج بھی پیپلزپارٹی کی فرعونیت کے سامنے ڈٹے ہوئے ہیں۔ 

 ڈسٹرکٹ کورنگی اور ایسٹ کے علیحدہ علیحدہ ورکرز اجلاسوں سے خطاب کرتے ہوئے سید مصطفی کمال کا کہنا تھا کہ میں کراچی کے لوگوں سے اپیل کرتا ہوں کہ 30 جنوری کو ایک دن ہمارے ساتھ چلیں، ہم حقوق دلوا کر اٹھیں گے کیونکہ ہم کرپٹ اور منافق نہیں،30 جنوری کے ہمارے مارچ سے پیپلز پارٹی کے ظالم حکمرانوں کو پتہ لگ جائے گا کہ سامنے جب باکردار، بہادر اور قابل قیادت کھڑی ہو تو مظلوم عوام کو اختیارات اور وسائل دینے کے علاہ دوسرا کوئی راستہ نہیں بچتا ۔انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی سندھ کے دیہی اور شہری علاقوں میں بلا تفریق ظلم کر رہی ہے،سندھ کے دیہی علاقوں کی عوام کو پیپلز پارٹی نے گزشتہ 50سال میں معاشی اور معاشرتی طور پر اتنا بدحال کردیا ہے کہ انہوں نے پیپلزپارٹی کے ظلم کے سامنے ناصرف ہتھیار ڈال دیے ہیں بلکہ ظلم کو اپنی قسمت کا فیصلہ مان کر پیپلزپارٹی کے ظلم کے سائے میں اپنی زندگی گزارنے پر مجبور ہوگئی ہیں ،سندھ کے شہری علاقے کراچی اور حیدرآباد آج تک پیپلزپارٹی کے جابرانہ ظلم کے آگے سیسہ پلائی ہوئی دیوار بنے ہوئے ہیں۔

مصطفی کمال نے کہا کہ تیرہ سالوں میں دس ہزار تین سو بیالیس ارب روپے ملے ،اس کے باوجود سندھ انسانوں کے رہنے کی سب سے بدترین جگہ ہے جبکہ میں اپنے دور میں صرف تین سو ارب خرچ کرکے کراچی کو دنیا کے تیزی سے ترقی کرنے والے شہروں میں شامل کر دیا، پیپلز پارٹی کل کے دہشتگرد آج بنا رہی ہے، لہذا اب ریاست کی ذمہ داری ہے کہ ملک کی بقا اور سلامتی کی خاطر اس مسئلے پر فوری توجہ دے اس سے پہلے کہ بہت دیر ہوجائے۔ 

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -