کہوٹہ اور گلگت میں دو بسوں کو حادثات ‘22مسافر جاں بحق ‘50سے زائد زخمی

کہوٹہ اور گلگت میں دو بسوں کو حادثات ‘22مسافر جاں بحق ‘50سے زائد زخمی

  

کہوٹہ / گلگت (آن لائن) کہوٹہ اور گلگت میں ٹریفک کے دو الگ الگ حادثات میں 22 مسافر جاں بحق جبکہ 50سے زائد زخمی ہوگئے ۔ زخمیوں میں کئی کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے جس سے ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے ، صدر آصف علی زرداری اور وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے ٹریفک حادثات میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے زخمیوں کو ہر ممکن علاج کی سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت کی ہے۔ پہلا افسوسناک واقعہ کہوٹہ کے گاﺅں پنجہاڑ میں پیش آیا جہاں کہوٹہ سے راولپنڈی جانے والی مسافر بس تیز رفتاری کے باعث ڈرائیو سے بے قابوہوکر گہری کھائی میں جاگری حادثے کے نتیجے میں 11 مسافر جاں بحق جبکہ 32 زخمی ہوگئے ، بس میں 70سے زائد افراد سوار تھے حادثے کے فوراً بعد ریسکیو اور پولیس کی نفری موقع پر پہنچ گئی اور امدادی کارروائیاں شروع کرکے زخمی ہونے والے مسافروں اور جاں بحق ہونے والے افراد کی نعشوں کو تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال کہوٹہ منتقل کردیا جہاں زخمی افراد کو طبی امداد فراہم کی جارہی ہے ہسپتال ذرائع کے مطابق زخمی ہونے والے افراد میں سے متعدد کی حالت تشویشناک ہے ۔ دوسرا واقعہ گلگت کے علاقے استور میں اس وقت پیش آیا جب مسافر بس پری شنگ سے استور آرہی تھی کہ راستے میں بس کی بریک فیل ہوگئی اور بس ڈرائیور سے بے قابو ہو کر گہری کھائی میں جاگری حادثے میں 11 مسافر جاں بحق جبکہ 20 افراد شدید زخمی ہوگئے حادثے کے بعد ریسکیو ٹیمیں جائے وقوعہ پر پہنچ گئیں اور امدادی کارروائیاں شروع کردی ہیں جبکہ جاں بحق ہونے والے افراد کی نعشوں اور زخمی ہونے والے افراد کو ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال اور سول ہسپتال منتقل کردیا گیا جہاں انہیں طبی امداد فراہم کی گئی ۔صدر مملکت آصف علی زرداری اور وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے استور بس حادثے پر گہرے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ہدایت کی ہے کہ زخمیوں کو ہر قسم کی طبی امداد فراہم کی جائے ۔ صدر آصف علی زرداری اور وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے ٹریفک حادثات میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر افسوس کااظہار کیا ہے ا ور مرنے والوں کے لواحقین سے اظہار ہمدردی کیا ہے اپنے علیحدہ علیحدہ پیغامات میں دونوں رہنماﺅں نے حادثے میں زخمیوں کی جلد صحت یابی کے لئے دعا کی ہے انہوں نے متعلقہ حکام کو زخمیوں کے علاج معالجے کے لیے ہر ممکن سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت کی ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -