ایران کی پاکستان کیلئے گیس ٹیرف میں کمی پر رضامندی

ایران کی پاکستان کیلئے گیس ٹیرف میں کمی پر رضامندی

  

 اسلام آباد(ثناءنیوز ) ایران نے پاکستان کے لیے گیس ٹیرف میں کمی کے لیے رضا مندی ظاہر کر دی ہے اور ایران نے ایک مرتبہ پھر ایران پاکستان گیس منصوبے کے لئے مالی وتکنیکی معاونت کی پیشکش کر دی ہے اور پاکستان کی جانب سے پائپ کی تعمیر پر سست روی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے واضح کر دیا ہے کہ اگر پاکستان نے 2014ءتک گیس نہ خریدی تو اسے ایک ملین ڈالر یومیہ جرمانہ ہو گا۔ آئی پی گیس منصوبے پر ایران اور پاکستان کا گزشتہ روز اسلام آباد میں اہم اجلاس ہوا جس میں ایران کی جانب سے ڈپٹی وزیر برائے پٹرولیم ڈاکٹر خالد نے نمائندگی کی جبکہ پاکستان کی جانب سے وزارت پٹرولیم کے ایڈیشنل سیکرٹری عابد سعید نے نمائندگی کی یہ اجلاس ایران پاکستان گیس پائپ لائن منصوبے کی تعمیر میں پیش رفت کے حوالے سے منعقد ہوا۔ نجی ٹی وی ذرائع کے مطابق ایرانی وفد نے پاکستان کی جانب سے پائپ لائن کی تعمیر میں سست روی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایران اپنی سائیڈ پر 2 پائپ لائینوں کی تنصیب پاکستان کی سرحد تک مکمل کر چکا ہے جبکہ پاکستان کی جانب سے تاحال کام شروع نہیں کیا گیا ۔ جس کے جواب میں پاکستانی حکام نے اس بات کی یقین دہانی کرائی کہ پاکستان پائپ لائن کی تعمیر مقررہ وقت پر مکمل کرے گا اور اس سلسلے میں روس کے ساتھ معاہدے کے لیے مذاکرات جاری ہیں اور روس کو ڈرافٹ بھجوا دیا گیا ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -