موٹر برانچ کے اہلکاروں نے نئی سیکیورٹی فیچر ڈ ٹرانسفر کو ناجائز آمدن کا ذریعہ بنا لیا

موٹر برانچ کے اہلکاروں نے نئی سیکیورٹی فیچر ڈ ٹرانسفر کو ناجائز آمدن کا ...

  

لاہور(نیوز رپورٹر) ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن آفس کی موٹر برانچ کے اہلکاروں نے نئی سکیورٹی فیچرڈ ٹرانسفر ڈیڈ کو ناجائز آمدن کا ذریعہ بنا لیا ہے، موٹر برانچ کے اہلکار خالد بشیر ،شہباز وغیرہ اصل مالک کی آمد کے بغیر ہی ٹرانسفر ڈیڈ ز جاری کرواکے ایجنٹوں میں بانٹتے ہیںاور روزانہ ہزاروں روپے کماتے ہیں ، تفصیلات کے مطابق ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن ڈیپارٹمنٹ نے یکم جولائی سے نئی سکیورٹی فیچرڈ ٹرانسفر ڈیڈ لاگو کردی ہے، جس کے تحت لازمی قرار دیا گیا ہے کہ ہرقسم کی گاڑی اور موٹر سائیکل کا مالک از خود موٹر برانچ آکر مبلغ تین سوروپے میں ٹرانسفر ڈیڈ حاصل کر ے جس کے بعد گاڑی فروخت ہوسکے گی بصورت دیگر گاڑی فروخت نہیں ہوسکے گی، لیکن ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ موٹر برانچ کے کلر ک شہباز اور خالد بشیر وغیرہ اصل مالکان کی بجائے از خود کئی کئی گاڑیوں کی ٹرانسفر ڈیڈ جاری کرتے ہیں اور گاڑی کے مالک کی جگہ ازخودٹرانسفر ڈیڈ پر دستخط کرتے ہیں،اور فی کس ڈیڈ کے عوض ایجنٹوں سے پانچ سو سے ایک ہزار روپے کماتے ہیں معلوم ہوا ہے کہ گزشتہ روز ڈائریکٹر موٹرز چوہدری آصف اورای ٹی اوموٹرز دن بھر آفس سے باہر رہے اور نتیجے کے طورپر متذکرہ بالا کلرکوں نے گاڑی مالکان کی بجائے ایجنٹوں کو اپنے دستخطوں سے ٹرانسفر ڈیڈیں جاری کرنے کا دھندہ شروع کئے رکھا،اس سلسلے میں گفتگو کے لئے ڈائریکٹر موٹرز چوہدری آصف سے رابطہ کیا گیا لیکن انہوں نے بات نہ کی

مزید :

صفحہ آخر -