7 ہزار سے زائد پولےس اہلکار تاحال ماہ جون کی تنخواہوں سے محروم

7 ہزار سے زائد پولےس اہلکار تاحال ماہ جون کی تنخواہوں سے محروم

  

لاہور ( کر ا ئم ر پو ر ٹر) لاہور پولیس کے 7ہزار سے زائد پولیس اہلکاروں کو تاحال ماہ جون کی تنخواہ نہ مل سکی پولیس لائن اور اکاو¿نٹ برانچ کے درمیان اہلکا ر شٹل کاک بن کے رہ گئے اہلکاروں میں مایو سی چھا گئی انہوں نے آئی جی پنجاب اور سی سی پی او لاہور سے ذاتی طور پر دلچسپی لینے کا مطالبہ کر دیا ۔ تفصیلات کے مطابق لاہور پولیس کے 7ہزار سے زائد پولیس اہلکاران کو ماہ جون کی تنخو اہ تاحال نہ مل سکی جس کے باعث اہلکارون پر یشان حال پولیس لائن اور اکاو¿نٹ برانچ کے چکر لگا لگا کر تھک ہار گئے یاد رہے کہ اے جی پنجاب نے واضع طور پرکہا تھا کہ پولیس کے تمام افسران و اہلکاران کی تنخواہوں کی ادائیگیاں بذریعہ بنک ہوں گی مگر اس حکم کی پر واہ نہ کرتے ہوئے اکاو¿نٹ برانچ کے افسران کی حد درمی سے ایسا ممکن نہیں ہو سکا جس کے باعث 7ہزار پولیس اہلکاران کو تاحال تنخواہ نہ مل سکی پر یشان حال پولیس اہلکاران کا کہنا ہے کہ ہمیں ایک فورس ہیں ہمارا کا م نہیں احتجاج کرنا مگر ہمیں مجبور کیا جارہا ہے کہ ہم کو ئی انتہائی قدم اٹھائیں ۔ 18روز گزر جانے کے باوجود ہمیں تنخواہ نہیں ملی ہم لوگوں سے ادھار لے لے کر اپنی ضروریات پوری کر ریں ہیں جبکہ ہمارے بیوی بچے تنخواہ کے انتظار میں روزانہ ہم سے پوچھتے ہیں ایسے حالات میں ہم اپنی ڈیوٹیاں بھی سر انجام نہیں دے پا رہے ہیں جبکہ دوکان داروں نے ادھار دینا بھی بند کر دیا ہے ایسے میں پولیس اور کر پشن نہ کرے تو کیا کر ے جبکہ رمضان المبارک کا مہینہ شروع ہونے کو ہے اور ہم ماہ جون کی تنخواہ کیلئے در بدر ہو رہیں ہیں جبکہ تاحال اکاو¿نٹ برانچ کے افسران نے بتایا ہے کہ 24تاریخ سے قبل تنخواو نہیں مل سکتی کیونکہ ہمارے پاس ابھی نہ ہی پیسے آئیں ہیں اور نہ ہی کوئی چیک ہمیں ملا ہے اس جواب کے بعد پولیس اہلکاران نے مزید مایوسی چھا گئی ہے انہوں نے میڈیا کے ذریعے وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شر یف ، آئی جی پنجاب حاجی حبیب الر حمان اور سی سی پی او لاہور محمد اسلم تر ین سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ ذاتی طور پر اس بات کا نوٹس لیں اور اہلکاران کو تنخواہوں کے معاملہ میں جو ذمہ دران ہیں ان کے خلاف کاروائی کی جائے اہلکاران نے خد شہ ظاہر کیا ہے کہ ان کی تنخواہیں یکم جولائی سے آ چکی ہیں جن کو اکاو¿نٹ برانچ والوں نے کسی دوسری جگہ پر استعمال لا چکے ہیں اور ہم کو ہر روز لارے لگا رہے ہیں

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -