’وہ عورت کسی مندر میں پاﺅں رکھ دے تو پھر مندر کو دھونا پڑتا ہے‘

’وہ عورت کسی مندر میں پاﺅں رکھ دے تو پھر مندر کو دھونا پڑتا ہے‘
’وہ عورت کسی مندر میں پاﺅں رکھ دے تو پھر مندر کو دھونا پڑتا ہے‘

  

نئی دہلی(نیوزڈیسک) بھارت میں نچلی ذات کے ہندوﺅں کے ساتھ آئے روز برے سلوک کے واقعات تو سامنے آتے ہی رہتے ہیں لیکن حال ہی میں ایک ایسا واقعہ پیش آیا ہے کہ سن کر آپ حیران رہ جائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق اترپردیش کے ضلع کانپور دیہات میں ایک پنڈت نے مندر کوصرف اس وجہ سے دھویاکہ کچھ نچلی ذات (دلت) کی ہندو خواتین نے اس مندر میں شادی کی تقریبات کی غرض سے پاﺅں رکھا تھا۔پنڈت اور اس کی بیوی نے مندر کو ”گنگا جل“سے دھویا تاکہ اسے کم ذات کی ہندو خواتین کی گندگی سے پاک کیا جاسکے۔بالمکی کمیونٹی کی مُنی دیوی نے چند خواتین کے ساتھ اس مندر میں آئی تھی جہاں اس نے اپنی بیٹی کی شادی کے سلسلے میں کچھ رسومات ادا کرنی تھیں۔ایک دیہاتی کاکہنا تھا کہ جب یہ خواتین چلی گئیں تو پنڈت نے ایک گھنٹے کے لئے مندر کا دروازہ بند کردیا اور اسے دھویا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس