وہ ملک جس نے امریکی فوجی کو پکڑ کر دو سال کیلئے جیل میں ڈال دیا،امریکہ میں کھلبلی مچ گئی

وہ ملک جس نے امریکی فوجی کو پکڑ کر دو سال کیلئے جیل میں ڈال دیا،امریکہ میں ...
وہ ملک جس نے امریکی فوجی کو پکڑ کر دو سال کیلئے جیل میں ڈال دیا،امریکہ میں کھلبلی مچ گئی

  

ٹوکیو(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی فوج دنیا بھر میں دندناتی پھر رہی ہے مگر ایک ایسا ملک ہے جس نے ایک امریکی فوجی کو پکڑ کر اڑھائی سال کے لیے جیل بھیج دیا ہے۔ یہ ملک کوئی اور نہیں بلکہ امریکہ کا قریبی اتحادی جاپان ہے۔ برطانوی اخبار ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق 24سالہ جسٹن کیسٹلینوس نامی امریکی فوجی نے رواں سال 13مارچ کو جنوبی جاپان کے شہر ناہا(Naha) میں ایک 40سالہ جاپانی خاتون کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔ خاتون شراب کے نشے میں تھی اور ہوٹل کی لابی میں نیم بے ہوشی کی حالت میں پڑی تھی۔ جسٹن اسے اٹھا کر اوپر اپنے کمرے میں لے گیا اور زیادتی کا نشانہ بنا لیا جس پر جاپانی پولیس نے اسے گرفتار کر کے عدالت میں پیش کر دیا تھا۔ اب عدالت نے اسے اڑھائی سال قید کی سزا سنا دی ہے۔

رپورٹ کے مطابق امریکی فوجی کو کسی دوسرے ملک میں قید کی سزا ملنے پر امریکہ میں کھلبلی مچ گئی ہے۔ جسٹس جاپانی صوبے اوکیناوا میں واقع امریکی فوجی اڈے پر تعینات تھا۔ عدالت میں جسٹن کا کہنا تھا کہ ”جو کچھ میں نے کیا اس پر معافی چاہتا ہوں۔ مجھے اپنے اقدام پر بہت پچھتاوا ہے۔“ عدالت نے قید کے ساتھ ملزم کے خاندان کو متاثرہ خاتون کو 21ہزار 789ڈالر (تقریباً 22لاکھ روپے) زرتلافی ادا کرنے کا حکم بھی دیا اور امریکی فوج کو بھی 2ہزار 842ڈالر (تقریباً3لاکھ روپے)ہرجانے کا حکم دیا۔ جاپان میں واقع امریکی سفارت خانے نے اس مقدمے اور فیصلے کے سلسلے میں ڈیلی میل کے رابطہ کرنے پر موقف دینے سے انکار کر دیا۔واضح رہے کہ خاتون سے زیادتی کے اس واقعے کے بعد بڑی تعداد میں جاپانی باشندوں نے احتجاجی جلوس نکالے تھے اور امریکی فوجی اڈے کو ختم کرنے کا مطالبہ کیا تھا کیونکہ اس سے قبل بھی امریکی فوجیوں کے جاپانی خواتین کو زیادتی کا نشانہ بنانے کے واقعات رونما ہو چکے ہیں۔اسی فوجی اڈے پر تعینات ایک امریکی فوجی کنٹریکٹر نے چند ماہ قبل ایک 20سال جاپانی لڑکی کو زیادتی کے بعد قتل کر دیا تھا۔ اس کا کیس تاحال جاپانی عدالت میں زیرسماعت ہے۔

مزید : بین الاقوامی