گجرپورہ چوری ڈکیتی کی وارداتوں اور جرائم میں اضافہ ، پولیس پر پر سر پرستی کا الزام

گجرپورہ چوری ڈکیتی کی وارداتوں اور جرائم میں اضافہ ، پولیس پر پر سر پرستی کا ...

 لاہور(وقائع نگار )تھانہ گجر پورہ کے علاقہ میں پولیس نے ڈاکوؤں ، چوروں اورنوسربازوں سمیت دیگر جرائم پیشہ افراد کو مبینہ طور پر علاقے میں کالے دھندے پروان چڑھانے کی کھلی چھٹی دے دی۔پولیس کا گشت نہ ہونے کی وجہ سے روزانہ فیملیزکاچوروں اور ڈاکوؤں کے ہاتھوں لٹنا معمول بن گیا، ڈاکو دن دیہاڑے لوٹ مار کا بازار گرم کرنے کے علاوہ مزاحمت پر شہریوں کوقتل کرنے سے بھی دریغ نہیں کرتے۔ پولیس جرائم پیشہ افراد اوربڑھتی ہوئی وارداتوں کو روکنے میں مکمل طور پر ناکام ہوگئی ۔ ان خیالات کا اظہار گجر پورہ کے رہائشیوں نے نمائندہ ’’پاکستان‘‘ سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ شہریوں کا کہنا تھا کہ علاقہ میں منشیات فروشوں میں نور پارک کا مہر چوانی ،پنڈ سگیاں کا فقیر حسین اورجانی پورہ حاجی پار ک کا شیخ اکمل شامل ہیں جو چرس ،افیون ،پاؤڈر ،شراب اور دیگر نشہ آور ادویات کا دھندہ کر تے ہیں۔پولیس بھی لکشمی کو آتا دیکھ کراس جان لیوا اور خاندانوں کو تباہ کردینے والے دھندہ میں کوئی رکاوٹ حائل نہیں کرتی ۔ علاقے میں پرچی ،میچ ،سٹہ تاش اور دیگر کھیلوں پر جوا ایک عام سی بات ہے۔ان قما ر بازوں میں دھوبی گھاٹ مین بازار کا محمد ادریس ،مغل پورہ کا جیدا جیکٹ، 60نمبر ویگن اڈہ کا ملک محمد افضال ،رحمان پی سی او مالک افتخار عرف ٹیڈی ،کوٹ خواجہ سعید کاشہباز ،چاند اور ننھا جبکہ فضل پورہ کا محمد اشفاق شامل ہیں ۔منشیات فروشوں اور قمار بازوں کے چنگل سے کوئی بچ بھی جائے تو رہی سہی کسر قحبہ خانہ کا مکروہ دھندہ کرنے والے افراد پوری کر دیتے ہیں ۔مقامی تا جروں ضیغم ،عباس،علی ،نواز،عمر سمیت دیگر متعدد افراد نے بتا یا کہ پو لیس کی جرائم پیشہ افراد سے ملی بھگت اور رشوت خوری کے با عث علاقے میں قانون نام کی کوئی چیز نظر نہیں آتی، اس لئے آئے روز جرائم کا گراف بڑھتا چلا جارہا ہے اور دن دیہاڑے ڈاکو مقامی دکانداروں کو گن پوائنٹ پر لوٹ کر فرار ہوجاتے ہیں لیکن پولیس اہلکار جائے وقوعہ پر تاخیر سے پہنچ کر بھی خود کو فرض شناس اہلکار ثابت کرنے کی ناکام کوشش کرنے کے بعدطفل تسلیاں دے کر رفو چکر ہوجاتے ہیں ۔تاجروں کا کہنا تھاکہ جرائم بڑھنے کی اصل وجہ پولیس کی ناقص حکمت عملی ہے کیونکہ اگر یہ گشت کے نظام کو ہی بہتر کرلیں تو 80فیصد جرائم کا خاتمہ کرنا کوئی بڑی بات نہیں لیکن پولیس نے صرف اور صرف اپنی روزی روٹی کے چکر میں اصل ڈیوٹی کو بھول کر عوام الناس کو جرائم پیشہ افراد کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا ہے۔ اعلی حکام کو چاہیے کہ وہ عوام کی حفاظت کو اولین ترجیح میں شامل کرتے ہوئے ایسے کرپٹ پولیس اہلکاروں کے خلاف سخت قانونی کارروائی عمل میں لائیں ۔اس حوالے سے تھانہ گجر پورہ میں رابطہ کیا گیا تو پولیس کا کہنا تھا کہ پولیس کی جانب سے علاقہ میں گشت کے نظام کو بہتر بنایا گیا ہے ۔علاقہ میں ہونے والی چوری و ڈکیتی کی وارداتوں کے حوالے سے پولیس بیٹ افسران کو خصوصی ٹاسک سونپا گیا ہے کہ وہ ان پر کنٹرول کریں ۔علاقہ میں جرائم کی شرح کنٹرول میں ہے الزامات میں کوئی صداقت نہیں ہے ۔

مزید : علاقائی