غذائی اشیاء کی تجارت میں سواارب کا خسارہ

غذائی اشیاء کی تجارت میں سواارب کا خسارہ

پاکستان سے غذائی اشیا کی برآمدات کے مقابلے میں درآمدات کا حجم زیادہ ہونے کی وجہ سے گزشتہ مالی سال کے پہلے گیارہ ماہ کے دوران صرف کھانے پینے کی اشیا کی تجارت میں ایک ارب 16کروڑ 70لاکھ ڈالر خسارے کا سامنا کرنا پڑا۔ زرعی ملک ہونے کے باوجود پاکستان میں غذائی اشیا کی درآمدات میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے سرکاری اعدادوشمار کے مطابق مالی سال 2014۔15کے دوران غذائی اشیا کی برآمد 4.249 ارب ڈالر اور درآمدات 4.549 ارب ڈالر تھی جس سے غذائی اشیا کی تجارت میں 30کروڑ ڈالر خسارے کا سامنا تھا جو مالی سال 2015۔16کے دوران بڑھ کر ایک ارب 16کروڑ 70لاکھ ڈالر کی سطح پر آگیا۔

مزید : ایڈیشن 2