پاکستان میں فوج کے ’’ٹیک اور ‘‘کرنے کے حالات نہیں ‘ چوہدری شجاعت

پاکستان میں فوج کے ’’ٹیک اور ‘‘کرنے کے حالات نہیں ‘ چوہدری شجاعت

لاہور(آئی این پی) مسلم لیگ (ق) کے سربراہ چوہدری شجاعت حسین نے کہا ہے کہ پاکستان اور ترکی کے حالات مختلف ہیں پاکستان میں فوج کے ’’ٹیک اور ‘‘کرنے کے حالات نہیں ‘اپوزیشن کو ذاتی مفادات کی بجائے قومی مفادات کو تر جیح دینا ہوگی اگر اپوزیشن ایک ہوجائے تو حکومت کو صیح راستے پر لایا جاسکتا ہے ‘لوٹی دولت مارکٹائی سے واپس نہیں آئیگی اس کیلئے ایک طریقہ کار ہو تا ہے ‘کشمیر کمیٹی سو رہی ہے حکومت کو مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے بڑے فیصلے کر نا ہوں گے ورنہ مسئلہ کشمیر حل نہیں ہوگا ‘حکومت مصلحتوں کی بجائے مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے بھر پور لابنگ کر یں ۔ اتوار کے روز اپنی رہا ئش گاہ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ (ق) کے سربراہ چوہدری شجاعت حسین نے کہا ہے کہ تر کی عوام نے جمہو ریت پر حملہ کے جواب میں زبردست ردعمل دیا ہے مگر پاکستان اور ترکی کے حالات ار ومعاملات بالکل مختلف ہے اس لیے پاکستان میں ایسے حالات نہیں کہ یہاں فوج ٹیک اور کر لیں لیکن ہمارے حکمرانوں کو تاریخ سے سبق حاصل کر نا چاہیے ۔ انہوں نے کہا کہ بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں کشمیریوں پر کیے جانیوالے مظالم کی جتنی مذمت کی جائے وہ کم ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پاکستان کو چاہیے کہ وہ کسی مصلحت کے بغیر مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے لابنگ کر یں اور مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے عالمی فورمز پر آواز بلند کی جائے کیونکہ مسئلہ کشمیر کا حل بہت ضروری ہے اور پوری قوم کشمیریوں کی آزادی کی تحر یک میں انکے ساتھ ہیں ۔

مزید : کراچی صفحہ اول