سی پیک میں مکمل حق دیئے بغیر منصوبہ تسلیم نہیں کرینگے :ڈاکٹر عالم محسود

سی پیک میں مکمل حق دیئے بغیر منصوبہ تسلیم نہیں کرینگے :ڈاکٹر عالم محسود

چارسد(بیورو رپورٹ) خیبر پختون نخوا سی پیک کمیٹی کے کنوینئر ڈاکٹر سید عالم محسود نے کہا ہے کہ خیبر پختون نخوا ہ کو کاریڈور میں مکمل حق دئیے بغیر مجوزہ منصوبے کو کسی صورت تسلیم نہیں کرینگے ۔ صوبائی حود مختاری کے باوجود ہمیں وسائل پر اختیار حاصل نہیں۔ پختون قوم آج خواب غفلت سے بیدار نہ ہوئی تو آئندہ نسلیں ہمیں کسی طور معاف نہیں کریگی ۔ پنجاب کو پاکستان سمجھنے والے دیگر اقوم سے زیادتی کرر ہے ہیں۔ وہ پختانہ متقرقی لیکوال کے زیر اہتمام ٹی ایم اے ہال چارسدہ میں اقتصادی راہداری منصوبہ کے حوالے سے ایک تقریب سے خطاب کر رہے تھے ۔ تقریب سے قومی وطن پارٹی کے فقیر حسین لالا ، مزدور کسان پارٹی کے صدر امجد علی سالار، اے این پی کے ضلعی سیکرٹری اطلاعات میاں سلیم شاہ ، پختون اولسی تحریک کے نظیف لالا اور دیگر نے بھی خطاب کیا ۔ تقریب سے خطاب کر تے ہوئے مقررین نے کہا کہ خیبر پختون خواہ کو کاریڈور میں مکمل حصہ دئیے بغیر ہم کسی صورت اس منصوبے کو تسلیم نہیں کر سکتے ۔ صوبائی اور وفاقی حکومت اس حوالے سے سنجیدگی دکھائیں بصورت دیگر اس کے خطرناک نتائج برآمد ہونگے ۔ ہم گلگت بلتستان ،ہزارہ ،فاٹا ،بلوچستان اور گوادر کے لوگوں کو کاریڈور میں ان کا جائز حق دلانا چاہتے ہیں۔مقررین نے کہا کہ اقتصادی راہدری منصوبہ میں ایک سازش کے تحت پختون قوم کو نظر انداز کیا جا رہا ہے لیکن ہم مرکزی حکومت پر واضح کرنا چاہتے ہیں کہ اپنے حقوق کیلئے کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کرینگے ۔ پنجاب کو پاکستان تسلیم کرنے والے دیگر صوبوں کو اپنا حق دیں ورنہ اس کے خطرناک نتائج برآمد ہونگے ۔ انہوں نے کہا کہ آج کے جدید ترین دنیا میں فاٹا کے عوام کالجز اور یونیورسٹی سے محروم ہیں جبکہ فاٹا میں دیگر بنیادی سہولیات کا فقدان ہے ۔ 35سال سے ہم قربانیاں دے رہے ہیں اور ملک و ملت کے خاطر پختون قوم نے ہزاروں شہادتیں دئیے مگر افسوس کہ آئی ڈی پیز کی بحالی کے لئے بیرون ملک سے آئے ہوئے فنڈز بھی پنجاب میں استعمال ہو رہے ہیں۔ صوبائی خود مختاری کے باوجود ہمیں وسائل پر اختیار نہیں ۔ پختون قوم آج خواب غفلت سے بیدار نہ ہوئی تو آئندہ نسلیں ہمیں معاف نہیں کریگی ۔ وفاقی حکومت منافقت چھوڑ کر صوبے کو اقتصادی راہدری میں اپنا حق دے دیں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر