اہل سنت والجماعت کے تحت تحفظ مدینہ و کشمیر ریلی

اہل سنت والجماعت کے تحت تحفظ مدینہ و کشمیر ریلی

کراچی (اسٹاف رپورٹر) اہل سنت والجماعت کے تحت مدینہ منورہ پر ہونی والی دہشت گردی ، کشمیر میں جاری بھارتی درندگی ، اہل مدینہ اور اہل کشمیر سے اظہار یکجہتی کیلئے تحفظ مدینہ و یکجہتی کشمیر ریلی گرومندر سے تاج کمپلیکس تک نکالی گئی،بڑی تعداد میں عوام کی شرکت، شرکاء کے مدینہ سے رشتہ کیا لاالہ اللہ ،مدینہ میں دہشت گردی نامنظور ، کشمیر ہمارا ہے ، کشمیر بنے گا پاکستان ، کشمیر کی آزادی انڈیا کی بربادی تک جنگ رہے گی کہ فلک شگاف نعرے ، علامہ رب نواز حنفی ، علامہ تاج محمد حنفی نے ریلی کے اختتام پر شرکاء کے ہمراہ بھارتی ترنگا ندر آتش کردیا مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے علامہ رب نواز حنفی ، علامہ تاج محمد حنفی ، سید محی الدین شاہ ،مولانا خالد محمود ،مولانا عادل عمر، قاری عبد الشکور ، امیر فضل خالق ، محمد کامران اور دیگر کا کہنا تھا کہ مدینہ منورہ پر حملہ اسلام پر حملہ ہے ، مدینہ طیبہ سے ہماری محبت مذہبی ہے ، اسلام کے مرکز پر حملہ کسی صورت قبول نہیں انہوں نے کشمیری مظالم پر حکمرانوں سے مطالبہ کیا کہ پاک فوج کشمیر بھیج دی جائے تو کشمیر ایک دن میں آزاد ہوجائے گا جو بزدل بھارتی فوج چند کشمیر یوں کے سامنے پسپا ہے وہ پاک فوج کے سامنے دم دبا کر بھاگنے پر مجبور ہوجائے گی ،پاک فوج اگرکشمیر کی آزادی کیلئے قدم بڑھائے تو کراچی سے 25000کارکن پاک فوج کے ہمراہ کشمیر بھیج دینگے، ہمیں مدینہ اور کشمیر سے محبت کلمہ کی بنیاد پر ہے ،ریلی میں بڑی تعداد میں شریک اہل سنت والجماعت کے کارکنا ن پیغام دے رہے ہیں کہ ہم اپنے کشمیری بھائی بہنوں کے ساتھ کھڑے ہیں ہمارے دل ان کے ساتھ دھڑکتے ہیں ، ہم کشمیر مسلمانوں پر ہونے والے مظالم پر سراپا احتجاج ہیں جبکہ کشمیر سمیت مدینہ منورہ ، شام ، برما اور فلسطین میں اہل کفر کے مظالم سہنے والے مسلمان ہمیں آواز دے رہے ہیں کہ متحد ہوجاؤ اور اپنے مسلمان بھائیوں کی مد د کیلئے متحد ہوجاؤ اب وقت آچکا ہے کہ ہم اپنے مدنی ، کشمیر ی ، شامی ، فلسطینی ، برمی اور دیگر مسلمان بھائیوں کے پر ہونے والے مظالم کیخلاف سراپا احتجاج بن کر اہل کفر کے سامنے سیسہ پلائی ہوئی دیوار بن جائیں آخر میں انہوں نے مطالبہ کیا کہ دہشت گردوں کے انکشافات روز منظر عام پر آرہے ہیں علامہ اورنگزیب فاروقی کو شدید خطرات لاحق ہیں انہیں فول پروف سیکیورٹی فراہم کی جائے اگر انہیں کچھ نقصان پہنچا تو ذمہ دارسندھ حکومت ہوگی ، کراچی میں ہونی والی ایک کانفرنس میں پاکستان کا پرچم لہرانے والے علامہ شبیر احمد عثمانی پر الزامات لگانا شرمناک اور پاکستان سے غداری کے مترادف ہیں شر پسندی پھیلانے والے عناصر کا نوٹس لیا جائے انہوں نے ریلی کو مناسب سیکیورٹی اور تعاون فراہم کرنے پر انتظامیہ کا شکریہ ادا

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر