فنڈز کی عدم دستیابی کے باوجود لال پل کی مرمت کا ٹینڈ ر جاری ، کام تاحال شروع نہ ہو سکا

فنڈز کی عدم دستیابی کے باوجود لال پل کی مرمت کا ٹینڈ ر جاری ، کام تاحال شروع ...

لاہور(نمائندہ پاکستان) لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی نے فنڈز کے بغیر ہی لال پل پر واقع پل کو ٹھیک کرنے کے لیے ایک کروڑ 69لاکھ53ہزار کا ٹینڈرجاری کر دیا،کاغذوں میں پل پر ڈیڑھ کروڑ روپیہ لگا دیا گیالیکن پل کی سیڑھیاں تا حال نگ آلود اور چھتیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں۔پاکستان سے بات کرتے ہوئے شہری یاسر علی کا کہنا تھا کہ ڈیڑھ کروڑ روپے میں تو نیا پل بن جانا چاہیے اور یہاں یہ حال ہے کہ پل کے اوپر سے چھت ہی غائب ہے اور اس پل پر گزشتہ دو برس سے کوئی کام نہیں کیا گیا۔محمد رفیق نے بتایا کہ پل کی چھت ایک برس سے ٹوٹی ہوئی ہے یہاں ڈیڑھ کروڑ تو کیا کسی نے ڈیڑھ روپیہ بھی خرچ نہیں کیا۔جبکہ بلال احمد کا کہنا تھا اگراس پل پر ڈیڑھ کروڑ روپیہ لگایا گیا ہے تو کم از کم یہاں نیا رنگ ہی نظر آ جاتا اور پل پر کوئی روشنی کا ہی انتظام کر دیا جاتا۔جبکہ اس حوالے سے چیف انجینئر ایل ڈی اے آفس کا کہنا ہے کہ یہ ان کا نہیں ٹیپا کا کام ہے۔مزید برآں ڈپٹی چیف انجینئر ایل ڈی اے ہارون سیفی کا کہنا تھا کہ اس کام میں تاخیر فنڈز نہ ہونے کی وجہ سے ہوئی ہے اور آئندہ ایک ڈیڑھ ماہ میں اس پل کا کام مکمل ہو جائے گا۔یاد رہے کہ فنڈز نہ ہونے کے باوجود ٹینڈر جاری کرنا محکمانہ غفلت ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1