ہنی مون پر گئے دولہا دلہن کی نوجوان لڑکی کے ساتھ ایسی شرمناک ترین حرکت کہ اب باقی شادی شدہ زندگی سلاخوں کے پیچھے گزارنا پڑے گی

ہنی مون پر گئے دولہا دلہن کی نوجوان لڑکی کے ساتھ ایسی شرمناک ترین حرکت کہ اب ...
ہنی مون پر گئے دولہا دلہن کی نوجوان لڑکی کے ساتھ ایسی شرمناک ترین حرکت کہ اب باقی شادی شدہ زندگی سلاخوں کے پیچھے گزارنا پڑے گی

  

فلوریڈا(نیوز ڈیسک)ہنی مون پر جانے والے نئے نویلے جوڑے کو ایک دوسرے کے سوا کسی کی خبر نہیں ہوتی لیکن ایک امریکی جوڑے نے اپنے ہنی مون کے دوران بے حیائی کی نئی مثال قائم کرتے ہوئے ایک نوجوان لڑکی کو اغوا کیا اور زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔

ویب سائٹ ورلڈ وائرڈ ویئر نیوز کے مطابق 32 سالہ رشادہ ہرلی اور اس کا 37سالہ شوہرٹموتھی لوئی ریاست جارجیا سے ہنی مون منانے کیلئے فلوریڈا آئے تھے۔ انہوں نے ایک لڑکی کو اغوا کے بعد زیادتی کا نشانہ بنایا اور اس کے بعد دونوں برہنہ حالت میں ہی ایک شاپنگ مال میں داخل ہوگئے جہاں انہیں پکڑ لیا گیا۔

نوبیاہتا میاں بیوی اپنی شادی کی تقریب سے فارغ ہوکر گھر پہنچے تو دوستوں نے ایسے تحفے کا انتظام کررکھا تھا کہ دیکھ کر واقعی پیروں تلے زمین نکل گئی، کیا تھا؟ دنیا میں کوئی تصور بھی نہیں کرسکتا کہ کسی کو شادی کا یہ تحفہ بھی دیا جاسکتا ہے

پولیس کے مطابق اس وحشی جوڑے نے 27 سالہ لڑکی کو پبلکس سپرمارٹ کی پارکنگ سے اغواءکیا۔ متاثرہ لڑکی نے پولیس کو بتایا کہ پہلے خاتون نے اس کی کنپٹی پر مکا مار کر اسے بیہوش کیا اور پھر دونوں اسے گاڑی میں ڈال کر اپنے ساتھ لے گئے۔ دونوں نے لڑکی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا لیکن جب وہ نشے کی زیادتی سے بے حال ہو رہے تھے تو لڑکی کو فرار ہونے کا موقع مل گیا۔

نشے میں دھت یہ جوڑا لڑکی کو زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد برہنہ حالت میں ہی ایک شاپنگ مال میں داخل ہوا اور وہاں سے کچھ اشیاءچرانے کی کوشش کی، جس پر انہیں پکڑ کر پولیس کے حوالے کر دیا گیا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ انہیں اغواءاور جنسی زیادتی کے جرائم میں عمر قید کی سزا ہو سکتی ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس