بندے اٹھا کر سمجھتے ہو تمہاری رعایا ہے؟ جس سے تفتیش کرنی ہو خود جایا کرو، سپریم کورٹ

بندے اٹھا کر سمجھتے ہو تمہاری رعایا ہے؟ جس سے تفتیش کرنی ہو خود جایا کرو، ...

کراچی (آئی این پی) سپریم کورٹ نے شہریوں کو حبس بے جا میں رکھنے پر 2پولیس افسران پر اظہار برہمی کیا،جسٹس گلزار احمد نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ بندے اٹھا کر سمجھتے ہوکہ تمہاری رعایا ہے؟جس کو چاہو اٹھا لیتے ہو، یہ تمہارے نوکر ہیں جو تھانے آئیں گے؟جس سے تفتیش کرنی ہو خود جایا کرو، نوکر سمجھتے ہو شہریوں کو؟ تمہارے غلام ہیں یہ لوگ؟۔ تفصیلات  کے مطابق ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل نے کہاکہ شہریوں کو حبس بے جا میں رکھنے پر دونوں افسران کو برطرف کیا تھا،پولیس افسران میں اے وی سی سی کے سب انسپکٹرز محمد یونس اور ارشاد جٹ شامل ہیں، پولیس افسران نے 3 شہریوں کو غیرقانونی طور پر لاک اپ کیا، شہریوں کو غیرقانونی حراست میں رکھنے پرعدالت نے پولیس افسران پراظہاربرہمی کیا،جسٹس گلزار احمد نے کہا کہ بندے اٹھا کر سمجھتے ہوکہ تمہاری رعایا ہے؟جس کو چاہو اٹھا لیتے ہو، سب انسپکٹر ارشاد جٹ نے سپریم کورٹ میں بیان دیا کہ مشتبہ افراد کو تفتیش کیلئے لائے تھے،عدالت نے کہا کہ یہ تمہارے نوکر ہیں جو تھانے آئیں گے؟جس سے تفتیش کرنی ہو خود جایا کرو،جسٹس گلزار نے سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ نوکر سمجھتے ہو شہریوں کو؟ تمہارے غلام ہیں یہ لوگ؟سپریم کورٹ رجسٹری نے فریقین کوآئندہ سماعت کیلئے نوٹس جاری کر دیئے۔

سپریم کورٹ 

مزید : صفحہ آخر


loading...