ٹینڈے کی بہتر پیداوار کیلئے کھادوں کے متناسب استعمال کی ہدایت

ٹینڈے کی بہتر پیداوار کیلئے کھادوں کے متناسب استعمال کی ہدایت

لاہور(اے پی پی) محکمہ زراعت نے کاشتکاروں کو ٹینڈے کی بہتر پیداوار کے حصول کے لئے کھادوں کے متناسب استعمال کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ٹینڈے کی فصل کو این:پی:کے بالترتیب 25:35:60 کلوگرام فی ایکڑ درکار ہیں جن کے حصول کے لئے کھیت کو 2بوری امونیم نائٹریٹ، 4بوری ایس ایس پی، ایک بوری سلفیٹ آف پوٹاش یا نصف بوری یوریا، ڈیڑھ بوری ڈی اے پی، ایک بوری سلفیٹ آف پوٹاش ملا کر بکھیرنا چاہیئے۔ محکمہ کے ترجمان نے بتایاکہ کھاد کو پورے کھیت میں بکھیرنے کی بجائے اگر لائنوں پر ڈالا جائے تو اس سے زیادہ بہتر نتائج نکلیں گے اور کھاد کی تھوڑی مقدار بھی کافی ہو گی۔ انہوں نے کہاکہ جب پھل لگنا شروع ہو تو ایک بوری امونیم نائٹریٹ یا آدھی بوری یوریا ڈالیں اور بعد ازاں تین ہفتوں کے وقفہ سے ایک بوری امونیم نائٹریٹ یا آدھی بوری یوریا ڈالتے رہیں نیز کھاد ڈالنے سے پہلے گوڈی کرنا بھی ضروری ہے۔

انہوں نے بتایاکہ کھادوں کی مذکورہ مقدار اچھی پیداوار حاصل کرنے کے لئے اشد ضروری ہے تاہم اگر کوئی کاشتکار اس مقدار میں اپنے وسائل اوردستیاب کھادوں کی اقسام کے حساب سے کمی بیشی کرنا چاہے تو وہ کھادوں میں موجود این:پی:کے کی فی بوری شرح کے حساب سے مقدار کا تعین کر سکتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ اس ضمن میں مزید رہنمائی و مشاورت کیلئے محکمہ زراعت کے فیلڈ سٹاف کی خدمات بھی حاصل کی جاسکتی ہیں۔

مزید : کامرس


loading...