مہنگی دوائیاں فروخت کرنے والوں کو گرفتار کیا جائے،تاجرالائنس

مہنگی دوائیاں فروخت کرنے والوں کو گرفتار کیا جائے،تاجرالائنس

کراچی(اکنامک رپورٹر)کراچی تاجرالائنس ایسوسی ایشن کے چیئرمین وبانی عام آدمی پاکستان ایاز میمن موتی والا نے ادویات کی قیمتوں میں ہوشربااضافے پر تشویش کااظہارکرتے ہیں ہوئے کہاکہ جہاں حکومت کی جانب سے جان بچانے والی ادویات کی قیمتوں میں 20فیصد سے زائد اضافہ کردیاگیاہے وہاں ادویات ساز کمپنیاں ادویات کی قیمتوں میں 100فیصد اضافے کے ساتھ اسے مارکیٹ میں بیچ رہی ہیں۔بلڈ پریشر،شوگر،ٹی بی،امراض قلب سمیت دیگر بیماریوں کی دوائیں اس وقت غریب عوام کی پہنچ سے مکمل طورپر دور ہوچکی ہیں۔ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی اور حکومت خاموش تماشائی بنی ہوئی اور عوام ہسپتالوں اور میڈیکل اسٹوروں میں خوارہورہی ہے۔ان خیالات کااظہارانہوں نے ڈیفنس آفس میں علاقہ معززین سے ہونے والی ملاقات میں کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ بے شمار میڈیکل اسٹور پرانی قیمتوں پر نئی قیمتوں کی لسٹ لگاکر منہ مانگی قیمت پر فروخت کررہے ہیں۔حکومت کا فرض ہے کہ وہ ادویات کی قیمتوں میں ازخود اضافہ کرنے والی کمپنیوں کے خلاف کریک ڈاؤن کرے اور اس کے ساتھ خود بھی ادویات کی قیمتوں میں کمی لائے،انہوں نے کہاکہ بیمار شہری مہنگے داموں ادویات خریدنے پر مجبور ہیں جبکہ جان بچانے والی سستی دوائیاں بھی اب عوام کی پہنچ سے دور ہوچکی ہیں۔ڈپریشن اور پریشانیوں میں گھرے 90فیصد لوگوں کی زندگیاں اب ادویات کے سہارے ہی چل رہی ہیں۔انہوں نے کہاکہ ایسی ادویہ ساز کمپنیوں کو مہنگی دوائیاں بیچنے سے روکنے کے لیے حکومت کیا اقدامات کررہی ہے ہمیں بتایاجائے۔لگتاہے کہ حکومت کو غریب عوام کی بجائے سرمایہ دار انہ نظام سے تعلق رکھنے والوں میں زیادہ دلچسپی ہے،انہوں نے مزید کہاکہ حکومت مہنگائی کے طوفان میں کمی لانے کے لیے اقدامات اٹھائے ورنہ کہیں ایسا نہ ہو کہ غریب عوام کی بدوعائیں گزشتہ حکومت کی طرح ان کو بھی لے ڈوبیں۔

مزید : کامرس


loading...