الیکشن کمیشن کا پنجاب میں بلدیاتی انتخابات کیلئے حلقہ بندیوں کا حتمی فیصلہ

الیکشن کمیشن کا پنجاب میں بلدیاتی انتخابات کیلئے حلقہ بندیوں کا حتمی فیصلہ

  

لاہور (آن لائن)وفاقی حکومت کا پنجاب میں بلدیاتی انتخابات کے انعقاد کے حوالے سے رویہ سنجیدہ دکھائی دے رہا ہے اور اس سلسلے میں الیکشن کمیشن پنجاب نے صوبے بھر میں بلدیاتی انتخابات کے انعقاد کے سلسلے میں حلقہ بندیوں کا حتمی فیصلہ کرتے ہوئے باقاعدہ شیڈول جاری کر دیا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ الیکشن کمیشن نے حلقہ بندیوں کا معاملہ چارہ ماہ میں مکمل کرنے کا فیصلہ کیا تھا لیکن نئے شیڈول کے تحت اب یہ کام ایک ماہ میں مکمل کیا جائیگا۔ صوبے بھر میں بلدیاتی حلقہ بندیاں 17 اکتوبر کو مکمل کی جانا تھیں مگر اب یہ حلقہ بندیاں 27 ستمبر تک مکمل کر لی جائیں گی۔ اس سلسلے میں 27 ستمبر کو حلقہ بندیوں کی حتمی فہرست الیکشن کمیشن کے دفتر میں آویزاں کر دی جائے گی جبکہ شیڈول کے تحت 19 ستمبر کو تیار کی جانے والی حلقہ بندیوں کی فہرست پر اعتراضات داخل کروائے جا سکیں گے۔26 ستمبر کو ان اعتراضات پر حتمی فیصلہ کیا جائے گا اور 27 ستمبر کو حلقہ بندیوں کی حتمی فہرست آویزاں کر دی جائے گی۔ بلدیاتی الیکشن کے سلسلے میں لاہور کی ایک کروڑ سے زائد آبادی پر مشتمل اس شہر کی حلقہ بندیوں کی تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں جن میں 475 نیبر ہڈ کونسلز بنائی جائیں گی جبکہ حلقہ بندیوں کی تکمیل 45 دن کے اندر الیکشن کمیشن صوبے بھر میں بلدیاتی انتخابات کا پہلا مرحلہ شروع کرنے کا پابند ہو گا۔ لاہور کی حلقہ بندیوں کے حوالے سے الیکشن کمیشن نے 3 رکنی انتظامی کمیٹی تشکیل دے دی ہے جو لاہور کی نیبر ہڈ کونسلز کے قیام کے لئے کام کرے گی۔

مزید :

صفحہ اول -