عمرہ زائرین کے پھنسے50 ملین ریال کی واپسی کو یقینی بنایا جائے، حافظ شفیق

عمرہ زائرین کے پھنسے50 ملین ریال کی واپسی کو یقینی بنایا جائے، حافظ شفیق

  

فیصل آباد(خصوصی رپورٹ)چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے چیئرمین حج عمرہ کمیٹی کے حافظ شفیق کاشف نے کہا ہے کہ پاکستانی عمرہ زائرین کے50 ملین ریال سعودی عرب میں پھنس گئے ہیں۔اگر اس سلسلے میں حکومت نے اپنا کردار ادا نہ کیا تو ٹریول انڈسٹری جو کہ پہلے ہی بندش کا شکار ہے تباہی کے دہانے پر پہنچ جائے گی۔انہوں نے کہا کہ سعودی عرب نے جب عمرہ ویزہ اور فضائی آپریشن معطل کیا تو اس وقت40 ہزار سے زائد عمرہ زائرین نے ادائیگی کر کے ویزہ حاصل کیا تھا۔کووڈ19 صورتحال کے باعث سعودی عرب حکومت نے ویزہ فیسیں واپس کرنے کا اعلان کر دیا تھا،ری فنڈ رقوم سعودی نجی کمپنیوں کے حوالے کر دی گئی تھیں،صرف سعودی سفارتخانے سے تصدیق کا مرحلہ باقی تھااب اس کے لئے وزارت مذہبی امور اپنا کردار ادا کرے اور پاکستانی کمپنیوں کے کاغذات کی ترجیحی بنیادوں پر تصدیق کی جائے تا کہ عمرہ زائرین کی معاشی مشکلات میں کمی ہواور انہیں ری فنڈ کیا جائے۔حافظ شفیق کاشف نے کہا کہ کئی پاکستانی نجی کمپنیوں نے اس سلسلے میں اپنی سرمایہ کاری کر رکھی ہے اور ابھی تک ایئر لائنز سے بھی ری فنڈ ہونا باقی ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت کی عدم توجہی کے باعث ٹریول انڈسٹری ایک بڑے بحران کا شکار ہو گئی ہے۔

عمرہ زائرین

مزید :

صفحہ آخر -