4ماہ تعطل کے بعد پنجاب میں 20جولائی سے انسداد پولیو مہم شروع کرنے کا فیصلہ

4ماہ تعطل کے بعد پنجاب میں 20جولائی سے انسداد پولیو مہم شروع کرنے کا فیصلہ

  

لاہور (آن لائن) کورونا وباء کے باعث چار ماہ کے تعطل کے بعد پنجاب میں انسداد پولیو مہم کا دوبارہ آغاز 20جولائی سے ہوگا۔ انسداد پولیو مہم کے سلسلے میں انتظامات کا جائزہ لینے کیلئے ایک اہم اجلاس صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد اور چیف سیکرٹری پنجاب جواد رفیق ملک کی زیر صدارت منعقد ہوا۔ اجلاس میں سیکرٹری پرائمری صحت کیپٹن (ر)محمد عثمان،کمشنر لاہور ڈویژن آصف بلال لودھی اور متعلقہ افسران نے شرکت کی جبکہ ڈویژنل کمشنرز، ڈپٹی کمشنرز اور ڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹی کے چیف ایگزیکٹو آفیسرز ویڈیو لنک کے ذریعے شریک ہوئے۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا کہ پولیوکے خاتمے کی کوششوں میں اربن علاقوں میں زیادہ چیلنجز کا سامنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مہم میں تعطل کی وجہ سے بچوں کو پولیو وائر س کے خطرات لاحق ہیں۔ انہوں نے سیکرٹری پرائمری ہیلتھ کیپٹن (ر) محمد عثمان کو ہدایت کی کہ پولیو کے خلاف مہم کیساتھ ساتھ ای پی آئی کوریج بہتر بنانے کیلئے جامع پلان تیار کیا جائے۔ چیف سیکرٹری نے افسران کو ہدایت کی کہ صوبہ میں پولیو کیخلاف مہم میں 100فیصد کوریج کو یقینی بنایا جائے، ایک بھی کیس رپورٹ ہونے کا مطلب مکمل ناکامی ہے۔سیکرٹری پرائمری ہیلتھ کیپٹن (ر) محمد عثمان نے اجلاس کو بتایا کہ 20جولائی سے فیصل آباد کی 44 اور اٹک کی 14یونین کونسلز میں انسداد پولیو مہم کیس ریسپانس کے طور پر شروع کی جائے گی جو پانچ روز جاری رہے گی۔انہوں نے کہا کہ اس مہم کے دوران58یونین کونسلوں میں مجموعی طور پر تین لاکھ 17ہزارسات سو 83بچوں کو پولیو ویکسین کے قطرے پلانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے۔

پولیو مہم

مزید :

صفحہ آخر -