وکلاء و بازر کے تعاون کے بغیر انصاف کی فراہمی ناممکن ہے: جسٹس محمد قاسم خان

وکلاء و بازر کے تعاون کے بغیر انصاف کی فراہمی ناممکن ہے: جسٹس محمد قاسم خان

  

ملتان (خصو صی ر پو رٹر) چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ مسٹرجسٹس محمد قاسم خان اپنے دورہ ملتان کے دوران گزشتہ روز لاہور ہائیکورٹ ملتان بنچ پہنچے تو سینئر جسٹس لاہور ہائی کورٹ ملتان بنچ مسٹر جسٹس چوہدری مسعود جہانگیر،رجسٹرار بہادر علی خان، ایڈ یشنل رجسٹرار محمد یار ولانہ،سیکرٹری ٹو چیف جسٹس محمد جاوید اقبال ملک نے ان کا استقبال کیا۔ جس کے فوری بعد چیف جسٹس محمد قاسم خان نے کیسز کی سماعت کی۔ان کی(بقیہ نمبر41صفحہ6پر)

آمد کے بعد ملتان ٹیکس بار کے صدر رانا ارشد بشیر کی قیادت میں وفد کے اراکین بشیر احمد انصاری،عبدالستار،نیاز احمد،ریحان احمد،سید جنید ممتاز شاہ نے ان سے ملاقات کی،جس میں چیف جسٹس محمد قاسم خان نے انہیں یقین دہانی کرائی کہ نئے جوڈیشل کمپلیکس میں ٹیکس بار کے وکلاء کیلئے جگہ رکھی جائے گی اور اپیلٹ ٹربیونل ان لینڈ بنچ کو مستقل طور پر جوڈیشل کمپلیکس میں قائم کیا جائے گا۔ بعدازاں ملتان ہائیکورٹ بار کے صدر طاہر محمود چوہدری،سجاد حیدرسپرا،میاں عباس عرفان وائیں، ڈسٹرکٹ بار کے صدر عمران ارشد سلہری، غلام نبی، طاہر چوہان، میاں طاہر ریاض قریشی، ملک عرفان میتلا، ملک الطاف راں، ذوالفقار شاہ،محمدجاویداقبال ملک،مس آسیہ گل،ارسلان منیر جوئیہ،ظہور چوہدری، ملک فیاض اسحاق، مالک لنگاہ اور انور مبین انصاری سمیت وفود نے چیف جسٹس محمد قاسم خان سیملاقات کی۔چیف جسٹس محمد قاسم خان نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ڈسٹرکٹ اور ہائی کورٹ بارز میں نئے ائر کنڈیشنرز لگائے جائیں گے اور چھٹیوں کے بعد ڈسٹرکٹ بار میں وکلاء اور سائلین کیلئے واٹر فلٹریشن پلانٹ بھی لگایا جائے گا۔قبل ازیں چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ مسٹرجسٹس محمد قاسم خان سے ایڈیشنل چیف سیکرٹری جنوبی پنجاب زاہد اختر زمان،ایڈیشنل آئی جی انعام غنی،ڈپٹی کمشنرعامر خٹک، سیشن جج ملتان رانا زاہد اقبال،سینئر ایڈیشنل رجسٹرار محمد یار ولانہ اور رجسٹرار لاہور ہائی کورٹ بہادر علی خان نے بھی ملاقاتیں کیں۔اس موقع پر ایڈیشنل چیف سیکرٹری زاہد اختر زمان نے چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ محمد قاسم خان کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ انہوں نے جنوبی پنجاب میں اپنی ذمہ داریاں سنبھال لیں ہیں،جنوبی پنجاب کو خوبصورت اور سرسبز بنایا جائے گا، جنوبی پنجاب کی محرومیوں کا خاتمہ کیا جائے گا،پارکوں کی حالت کو بہتر بنایا جائے گا،سڑکوں کی تعمیر و مرمت کی جائے گی، جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے قیام سے اب اس خطہ کی عوام کو لاہور نہیں جانا پڑے گا، اور اب ان کے مسائل کو یہیں حل کیا جائے گا۔ڈپٹی کمشنر عامرخٹک نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ ملتان شہر کو صاف ستھرا بنانے کے لیے سالڈ ویسٹ مینجمنٹ کمپنی اپنی بھرپور توانائیاں صرف کر رہی ہے،عید الاضحی پر شہر سے کوڑا کرکٹ اکٹھا کے لئے پلان تیار کرلیا گیا ہے اور دیگر تمام معاملات بھی بہترین انداز میں حل کئے جا رہے ہیں۔دریں اثناء چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ مسٹر جسٹس محمد قاسم خان نے ہائیکورٹ بار ایسوسی ایشن کے وفود سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ بارز اور وکلاء کے کو درپیش مسائل سے مکمل طور پر آگاہ ہیں بارز ہمارا حصہ ہیں ان کو درپیش مسائل پر ہمدردانہ غور ہو رہا ہے اور بہت سے مسائل حل کئے ہیں کچہری وسعت، ہائیکورٹ و ڈسٹرکٹ بار پارکنگ پلازہ سمیت باقی جلد مکمل حل ہو جائیں گے انصاف کی جلد اور دہلیز پر دستیابی کے لئے عدلیہ کے معجز ججز صاحبان دن رات کوشاں ہیں اور وکلاء و بارز کے تعاون کے بغیر انصاف کی فراہمی نا ممکن ہے اس موقع پر ہائیکورٹ بار ایسوسی ایشن ملتان کے صدر طاہر محمود اور جنرل سیکرٹری سجاد حیدر سپرا کی قیادت میں وفدمیں عرفان وائیں،نائب صدرطاہر قریشی،لائبریری سیکرٹری فرزانہ کوثر،فنانس سیکرٹری احسان گل اور ممبران ایگزیکٹیو شاہد افضل،دلدار برولہ،اشرف سدھو،تعظیم باجوہ،فخر ملانہ شریک تھے۔جبکہ ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ملتان صدر عمران رشید سلہری،جنرل سیکرٹری غلام نبی طاہر اور مالک خان لنگاہ کی قیادت میں ملنے والے وفد میں چوہدری عبدالجبار گجر،نائب صدرملک الطاف راں،جوائنٹ سیکرٹری آسیہ گل،فنانس سیکرٹری ملک عرفان میتلا اور ممبران ایگزیکٹیو ذوالفقار علی شاہ،ارسلان جوئیہ،طاہر قریشی،جاوید اقبال،فیاض اسحاق،ظہور چوہدری شریک تھیاس موقع پر دونوں بارز نے چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ مسٹر جسٹس محمد قاسم خان کو بارز میں آنے دعوت دی جس پر انہوں نے ماہ اگست میں آنے کا وعدہ کیا۔جبکہ چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس محمد قاسم خان نے ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن ملتان کے عہدیداران سے ملاقات کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملتان بار انکا اپنا گھر ہے۔ وکلاء کے مسائل کا حل ترجیحات میں شامل ہے،عدالتوں کی جانب سے سائلین کو جلد انصاف فراہم کرنے کی کوششیں جاری ہیں۔ زیر التواء مقدمات کی تعداد کو کم کیا جا رہا ہے، نئے مقدمات کو مقررہ مدت میں نمٹانے کے لئے ہدایات جاری کی گئی ہیں۔سب سے پہلے پارکنگ پلازہ کی تعمیر سے مشکلات دور ہونگی، نئے تعمیر ہونے والے بلاک سے نوجوان وکلاء کی چیمبرز کی کمی دور ہوگی، بار عہدیداران نے چیف جسٹس کو وکلاء کو درپیش مسائل سے آگاہ کیا اور ضلع کچہری میں عدالتوں کے توسیع منصوبے کی جلد تکمیل کا مطالبہ بھی کیا۔ادھر چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ مسٹر جسٹس محمد قاسم خان سے ٹیکس بار ایسوسی ایشن ملتان کے صدر راشد بشیر،عبدالستار،نیاز خان اور بشیر احمد انصاری نے ملاقات کی اور انہیں ٹیکس بار کے وکلاے کو درپیش مسائل اور بار ہال کے لئے جگہ کی فراہمی کے ساتھ دیگر مسائل پیش کئے جن کو چیف جسٹس محمد قاسم خان نے حل کرنے کی یقین دہانی کرائی اس موقع پر ٹیکس بار کی طرف سے معجز چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ مسٹر جسٹس محمد قاسم خان کو گلدستہ پیش کیا اور نیک خواہشات کا اظہار کیا۔جبکہ چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس محمد قاسم خان نے کورٹ رپورٹرز سے ملاقات کے دوران اظہار خیال کرتے ہوئے کہا ہے کہ عدالتیں کھلی ہیں اور میڈیا کو کوریج کے حوالے سے کوئی قدغن نہیں ہے تاہم عدالتیں کسی کیس کی رپورٹنگ سے روکدے یا پابندی عائد کردے تو میڈیا اپنی ذمہ داریوں کا احساس کرے۔ انہوں نے کہا کہ تجویز ہے کہ ضلع کچہری میں ڈپٹی کمشنر کے تاریخی آفس کے علاوہ تمام عمارتوں کو مسمار کرکے ان کی جگہ تین منزلہ عمارت کی جائیں جس میں تمام سہولیات میسر ہوں گی۔ پارکنگ کا انتظام بیسمنٹ میں ہوگا۔ تاکہ ٹریفک میں رکاوٹ پیدا نہ ہو۔انہوں نے کہا کہ ڈپٹی کمشنر نے ضلع کچہری توسیع بارے بریفنگ دی ہے اور نقشہ جات کی مدد سے انہیں کام کی رفتار بارے آگاہ کیا۔

جسٹس قاسم خان

مزید :

ملتان صفحہ آخر -