رانا اعجاز فنکاردوست‘باکمال ومقبول آفیسر تھے: تعزیتی ریفرنس

رانا اعجاز فنکاردوست‘باکمال ومقبول آفیسر تھے: تعزیتی ریفرنس

  

ملتان (سٹاف رپورٹر)اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور کے شعبہ میڈیا سٹڈی کے ایسوسی ایٹ پروفیسر ڈاکٹر محمد شہزاد رانا نے کہا ہے کہ رانا اعجاز محمود معاشرے کی حسین اقدار کے امین تھے۔انہوں نے یہ بات بہاولپور آرٹس کونسل کے زیر اھتمام ممتاز دانشور اور انفارمیشن(بقیہ نمبر33صفحہ6پر)

ڈیپارٹمنٹ و آرٹس کونسل بہاولپور کے سابق ڈائریکٹر رانا اعجاز محمود کی یاد میں منعقدہ تعزیتی ریفرنس سے خطاب کرتے ھوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ رانا اعجاز محمود ھمارے سماج کی تیزی سے معدوم ھوتی ھوئی اقدار کے پاسدار تھے‘ان کی ساری زندگی وضع داری اور انسان دوستی سے عبارت ھے۔ڈائریکٹر بہاولپور آرٹس کونسل سلیم قیصر نے کہا کہ رانا اعجاز محمود اپنی علم دوستی کے حوالے سے خاص شناخت رکھتے تھے۔ان کا مطالعہ وسیع اور دستر خوان کشادہ ھوا کرتا تھا اور وہ وسیبی ثقافت کا جیتا جاگتا نمونہ تھے۔انفارمیشن ڈیپارٹمنٹ بہاولپور کے ڈپٹی ڈائریکٹر ناصر حمید نے کہا کہ رانا اعجاز محمود محکمے کے ایک دلیر اور با اصول آفیسر تھے اور ان کی پوری زندگی پروفیشنل ازم کے زریں اصولوں سے عبارت تھی۔وہ ایک اچھے آفیسر ھونے کے ساتھ ساتھ ایک اچھے انسان بھی تھے۔ڈپٹی ڈائریکٹر محکمہ تعلقات عامہ و سابق ڈائریکٹر بہاولپور آرٹس کونسل سید عابد حسن رضوی نے اس موقع پر رانا اعجاز محمود کے ساتھ اپنی یادوں کو تازہ کرتے ھوئے کہا کہ رانا اعجاز محمود سٹاف کے ساتھ انتہائی مشفق اور ھمدرد تھے۔تقریب کے ناظم اور بہاولپور آرٹس کونسل کے پروگرام آفیسر ملک ذکااللہ نے کہا کہ رانا اعجاز محمود کی فنکار دوستی اپنی مثال آپ تھی۔فنکاروں کے مسائل حل کرنے میں وہ ھمیشہ کوشاں رھا کرتے تھے۔آرٹس کونسل کی مارکیٹنگ آفیسر مہ جبیں نے کہا کہ رانا اعجاز محمود ایک بہترین آفیسر اور انسان تھے۔ایڈووکیٹ پروین عطا نے کہا کہ رانا اعجاز ایک باکمال آفیسر تھے۔سابق سٹی ناظم بہاولپور ملک محمد اسلم نے کہا کہ رانا اعجاز محمود ایک بہترین آفیسر'دوست اور انسان تھے۔اللہ تعالی نے انہیں بہت سی خوبیوں اور اوصاف سے نوازا تھا۔ایجوکیشنسٹ اعجاز سمرا نے کہا کہ رانا اعجاز محمود کی شخصیت میں علمی پہلو خاص طور پر نمایاں تھا۔سیدہ تسنیم گیلانی نے کہا کہ رانا اعجاز محمود اپنی ذات میں ایک انجمن تھے۔ اصغر بہاولپوری نے کہا کہ رانا اعجاز محمود فنکاروں کا بہت خیال رکھتے تھے۔ سرائیکی شاعر دیوانہ بلوچ نے رانا اعجاز محمود کو منظوم خراج عقیدت پیش کیا۔ ڈرامہ آرٹسٹ امجد شانی نے کہا کہ رانا اعجاز محمود اپنی فنکار دوستی کے باعث فنکار طبقے میں احترام کی نظر سے دیکھے جاتے تھے۔شیخ ذیشان نے کہا رانا اعجاز محمود اپنی دانش اور بصیرت کے حوالے سے ھر خاص و عام میں مقبول تھے۔تقریب کے آخر میں وائس آف ساؤتھ پنجاب شاھد علی خان نے رانا اعجاز محمود کا پسندیدہ عارفانہ کلام پیش کیا اور رانا اعجاز محمود کے درجات کی بلندی کے لئے دعا بھی کی گئی۔تقریب میں ذیشان لطیف'عصمہ خان'شازیہ ناز'حافظ شبیر احمد اور یوسف راجہ کے علاوہ زندگی کے دیگر شعبوں سے تعلق رکھنے والے لوگوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔

تعزیت

مزید :

ملتان صفحہ آخر -