سیکرٹریٹ کا ڈھونگ ختم‘صوبے کا اعلان کیا جائے‘ظہور دھریجہ

سیکرٹریٹ کا ڈھونگ ختم‘صوبے کا اعلان کیا جائے‘ظہور دھریجہ

  

ملتان (سٹی رپورٹر)سول سیکرٹریٹ کا ڈھونگ ختم کرکے صوبے کا اعلان کیا جائے۔ ان خیالات کا اظہار سرائیکستان قومی کونسل کے صدر ظہور دھریجہ نے مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر سرائیکی شاعر اجمل خاموش، نذر فرید بودلہ، صدام سہو،(بقیہ نمبر4صفحہ6پر)

رضوان قلندری،یاسین ساجن،لیاقت قریشی، رمضان قادری،سلمان قریشی اور دیگر موجود تھے۔ انہوں نے کہا کہ سول سیکرٹریٹ صوبے کا متبادل نہیں ہو سکتا، وسیب کے کروڑوں لوگوں کو محض دو بے اختیار افسر دے کر ٹرخایا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اخبارات میں ایڈیشنل آئی جی کے اختیارات کا جو نوٹیفکیشن جاری ہوا ہے، اسے پڑھ کر شرم آتی ہے کہ ایڈیشنل آئی جی کو ریجن میں آنے والے دفاتر کی انسپکشن اور تفتیش تبدیل کرنے کے اختیارات ہونگے۔ حالانکہ یہ کام ایک ایس پی بھی کر سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم اور گورنر ہاو?س کو یونیورسٹی کا درجہ دینے کا اعلان کرنے والوں نے اسلامیہ یونیورسٹی کا اولڈ کیمپس چھین کر وہاں سول سیکرٹریٹ بنا رہے ہیں، جس کے خلاف ہمارا احتجاج جاری رہے گا۔اسی طرح اربوں روپے سے بننے والے ملتان میٹرو پراجیکٹ کو بند کر کے اس کے دفاتر کے لئے تعمیر ہونے والی جگہ ایڈیشنل آئی جی آفس کے لئے دی جا رہی ہے، یہ سب کچھ وسیب کے ساتھ بد ترین مذاق ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ دو دن ملتان میں رہے مگر صوبے یا سول سیکرٹریٹ کے مسئلے پر اجلاس تو کیا بات کرنا تک گوارا نہ کیا۔ وزیراعلیٰ بلوچستان کو ایک ارب روپے کا چیک دینے چلے گئے، حالانکہ یہ رقم وسیب کے ان مزدوروں کو دینی چاہئے تھی جو بلوچستان میں دہشت گردی کا نشانہ بنے اور بے جرم مارے گئے۔ سرائیکی وسیب کے مزدوروں کا نہ سابقہ حکمرانوں کو احساس تھا اور نہ موجودہ حکمرانوں کو ہے۔

ظہور دھریجہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -