ہسپتالوں میں کورونا مریضوں کے رش میں 40فیصد کمی آئی ہے: تیمور جھگڑا

ہسپتالوں میں کورونا مریضوں کے رش میں 40فیصد کمی آئی ہے: تیمور جھگڑا

  

پشاور(سٹاف رپورٹر) خیبرپختونخوا کے وزیر صحت و خزانہ تیمور سلیم خان جھگڑا نے کہا ہے کہ صوبے کے ہسپتالوں پر کورونا مریضوں کے رش میں 40 سے 50 فیصد کمی آئی ہے تاہم وباء موجود ہے اور اسے آسان نہیں لیا جانا چاہیے۔ ہسپتالوں نے وباء کا بہترین طریقے سے مقابلہ کیا ہے۔ صوبائی وزیر نے ان خیالات کا اظہار سماجی تنظیم سینٹر فار گورننس اینڈ پبلک اکاؤنٹبلیٹی (سی جی پی اے) کی جانب سے محکمہ صحت خیبرپختونخوا کو طبی عملے کے لیے حفاظتی سامان کی حوالگی کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ وزیر صحت تیمور جھگڑا نے سماجی تنظیم کے حکام سے سامان وصول کیا۔ محکمہ صحت کو طبی عملے کے لیے دئیے جانے والے ذاتی حفاظتی سامان میں 18 ہزار میڈیکل ماسک، 700 حفاظتی گاؤن، 700 کے این 95 ماسک، 700 فیس شیلڈز، 700 حفاظتی چشمے اور 400 لیٹرز ہینڈ سینیٹائزر شامل ہے۔ اس موقع پر وزیر صحت و خزانہ کا کہنا تھا کہ ہسپتالوں پر کورونا مریضوں کا رش 40 سے 50 فیصد کم ہوا ہے تاہم اس کا مطلب یہ نہیں کہ وباء ختم ہو گئی ہے بلکہ عوام نے احتیاطی تدابیر اپنانے کے ساتھ ساتھ آگاہی حاصل کر لی اور زیادہ تر علامات ظاہر ہونے پر ازخود آئسولیٹ ہو رہے ہیں جو کہ خوش آئند بات ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہسپتالوں نے بہترین طریقے سے اس وباء کا مقابلہ کیا اور طبی عملہ پوری دلجمعی سے اپنے فرائض سر انجام دے رہا ہے۔ تیمور جھگڑا نے کہا کہ وباء تاحال موجود ہے اور اسے آسان نہیں لیا جانا چاہیے۔ عید اور محرم الحرام کے دوران ہمیں ایس او پیز اور احتیاطی تدابیر کا خاص خیال رکھنا ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ باقی ممالک کی طرح وباء کی دوسری لہر کا خطرہ بھی موجود ہے ہمیں اس کے لیے تیار رہنا چاہیے۔ تیمور جھگڑا نے کہا کہ شروع دن سے ہم کورونا کیسز اور اموات کے حوالے سے ڈبلیو ایچ او کی گائیڈ لائنز اپناتے ہوئے شفاف ڈیٹا مرتب کر رہے ہیں۔ کورونا وباء کے دوران ہسپتالوں کی استعداد میں دگنا اضافہ کیا ہے اور اس پر مزید کام بھی جاری ہے۔ صوبائی وزیر نے سماجی تنظیم سی جی پی اے کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ اس ذاتی حفاظتی سامان سے ڈاکٹرز اور طبی عملے کی حفاظت میں مدد ملے گی۔ سماجی تنظیموں کی جانب سے اس طرح کا تعاون لائق تحسین ہیں۔

سرائے نورنگ (نمائندہ پاکستان)خیبرپختونخواکے وزیر صحت تیمور سلیم جھگڑنے کہاہے کہ تحریک انصاف کی صوبائی حکومت وزیر اعظم عمران خان کے وژن کے مطابق پسماند اضلاع میں صحت سہولیات سمیت تعمیروترقی اور عوام کے معیار زندگی بہتر کرنے کے لئے ٹھوس اور مربوط کوششیں کررہی ہے انہوں نے کارکنوں اورمقامی قیادت پر زوردیاکہ پارٹی کی فعالیت اور مقبولیت پرتوجہ دی جائے۔ان خیالات کااظہار انہوں نے گزشتہ روز یہاں تحریک انصاف تحصیل غزنی خیل کے صدروسابق تحصیل کونسلرحافرحان خان کی رہائش گاہ واقع تاجہ زئی میں کارکنوں اور مقامی عہدیداروں سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر مقامی قائدین اور کارکن بڑی تعداد میں موجودتھے،جہاں پر تحصیل غزنی خیل کے صدر حاجی فرحان خان نے صوبائی وزیر کے سامنے لکی مروت کے عوام کو درپیش مسائل پیش کئے۔صوبائی وزیر صحت تیمور سلیم جھگڑنے کہاکہ تحریک انصاف کی حکومت پسمانداضلاع میں عوام کو زیادہ سے زیادہ سہولیات مہیا کرنے کے لئے اقدامات اٹھارہی ہے جن میں صحت،تعلیم،بجلی اوررابطہ سڑکیں سمیت سہولیات شامل ہے تاکہ وہاں کے عوام زندگی کی بنیادی سہولیات گھروں کے نزدیک میسر ہوگی انہوں نے کہاکہ تحریک انصاف نے جب سے اقتدارسنبھالاہے تب سے صوبہ بھرمیں عوام نے سکھ کا سانس لیا ہے چونکہ ماضی کی حکومتوں نے دانستہ طور پر صوبہ خیبرپختونخوااورخصوصاجنوبی اضلاع کو ترقی کے دور سے محروم کررکھاگیاہے جس کا خمیازہ آج عوام بھگت رہے ہیں انہوں نے اس عزم کا اعادہ کیاہیکہ حکومت پسماندہ اضلاع میں زیادہ سے زیادہ ترقیاتی منصوبے منظور کرے گی انہوں نے تحریک انصاف کے کارکنوں پرزوردیاکہ پارٹی کی فعالیت اور مقبولیت کے لئے جدوجہد شروع کریں اور وزیراعظم عمران خان کا مشن گھرگھرتک پہنچائیں۔

مزید :

صفحہ اول -